عدالت ایف آئی اے کو اختیارات کا غلط استعمال نہیں کرنے دیگی، اسلام آباد ہائیکورٹ 

عدالت ایف آئی اے کو اختیارات کا غلط استعمال نہیں کرنے دیگی، اسلام آباد ...

  

  اسلام آباد(این این آئی) اسلام آباد ہائیکورٹ نے کہا ہے کہ عدالت ایف آئی اے کو اختیارات کا غلط استعمال نہیں کردے گی۔اسلام آباد ہائیکورٹ میں پی ٹی آئی کی رکن قومی اسمبلی کنول شوزب کے پڑوسی کیساتھ جھگڑے میں ایف آئی اے کی جانب سے کارروائی اورشہری کو نوٹس جاری کرنے کے معاملے پر کیس کی سماعت ہوئی۔اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے دوران سماعت ایف آئی اے کے ایڈیشنل ڈائریکٹر سے استفسار کیا کیس کا تفتیشی افسرکون ہے؟ آپ کے پاس کیا کمپلینٹ آئی تھی؟ آپ نے اس پر نوٹس کیا؟ کیوں نا آپ کیخلاف کارروائی کریں؟۔ ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے نے بتایا ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کی اجازت لے کر نوٹس جاری کیا گیا تھا اور یہ کیس ان کے آنے سے پہلے کا ہے؟۔چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دئیے ایف آئی اے کا یہ کام رہ گیا ہے کہ بڑے لوگوں کیلئے آلہ کاربن کر شہریوں کو ہراساں کرے، یہ عدالت ایف آئی اے کو اختیارات کا غلط استعمال نہیں ہونے دے گی۔ عدالت نے ڈی جی ایف آئی کو انکوائری کا حکم دیتے ہوئے 6اپریل تک تفصیلی رپورٹ طلب کر لی۔

ایف آئی اے 

مزید :

صفحہ آخر -