خواتین کے حقو ق کا تحفظ معاشرے کی اجتماعی ذمہ داری،یاور عباس

  خواتین کے حقو ق کا تحفظ معاشرے کی اجتماعی ذمہ داری،یاور عباس

  

 لاہور (لیڈی رپورٹر)صوبائی وزیر سماجی بہبود سید یاور عباس بخاری نے کہا ہے کہ خواتین کے حقوق کا تحفظ معاشرے کی اجتماعی ذمہ داری ہے۔ اسلام نے عورتوں کو مرد کے مساوی حقوق دیے اور کوئی عورت کمزور نہیں۔اسی طرح آئین پاکستان بھی عورتوں کے حقوق کی مکمل ضمانت دیتا ہے۔پنجاب ویمن پروٹیکشن اتھارٹی اور نجی اشتراک سے عالمی یوم خواتین کے حوالے سے ایک مقامی ہوٹل میں منعقدہ کانفرنس سے  خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف خواتین کے متحرک کردار کی پر جوش حامی ہے۔

 اور دیگر جماعتوں کو بھی اس پالیسی کی تقلید کرنی چاہیئے۔اْنہوں نے کہا کہ خواتین کے ساتھ بچوں اور خواجہ سراؤں سے سماجی ناانصافی کا بھی قلع قمع کرنا ہوگا۔اس حوالے سے کانفرنس کی سفارشات پر عملدرآمد کی ہر ممکن کوشش کی جائے گی۔سید یاور عباس بخاری نے کہا کہ پنجاب ویمن پروٹیکشن اتھارٹی مظلوم خواتین کے لئے مضبوط ڈھال ہے۔ کسی بھی معاشرتی ناانصافی کا شکار خواتین بلاجھجھک اس ادارے کی ہیلپ لائن پر رابطہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ہر ڈویڑن میں انسداد تشدد مراکز برائے خواتین کے قیام کی منظوری دے دی ہے۔ اس پراجیکٹ کا دائرہ کار بتدریج بنیادی سطح تک بڑھایا جائے گا۔ جسٹس ریٹائرڈ ناصرہ اقبال نے کہا کہ دنیا اب حقوق نسواں کی بات کر رہی ہے جبکہ اسلام نے چودہ سو سال پہلے خواتین کو مساوی حقوق دیے ہیں۔ اعلیٰ تعلیم کے بعد خواتین کو گھر بٹھانا ناانصافی ہے۔ ڈائریکٹر برٹش کونسل مائیکل ہولگیٹ نے کہا کہ ویمن لیڈر شپ سپورٹ کے لئے برٹش کونسل نے ہمیشہ ساتھ دیاہے اور پاکستانی خواتین کی فلاح کیلئے آئندہ بھی ہر ممکن تعاون کرینگے۔ ڈائریکٹر جنرل پنجاب ویمن پروٹیکشن اتھارٹی ارشاد وحید نے خواتین کے حقوق کے تحفظ سے متعلق حکومتی سطح پر اقدامات کی تفصیلات بتائیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -