توہین عدالت کی درخواست پر سیکرٹری سکولز ایجوکیشن کو معاملہ حل کرنے کیلئے مہلت 

توہین عدالت کی درخواست پر سیکرٹری سکولز ایجوکیشن کو معاملہ حل کرنے کیلئے ...

  

 لاہور(نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے اساتذہ کو تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر توہین عدالت کی درخواست پر سیکرٹری سکولز ایجوکیشن سارہ اسلم کو معاملہ حل کرنے کے لئے ایک ماہ کی مہلت دے دی  عدالت نے 19 اپریل کو عدالتی احکامات پر عمل درآمد کی رپورٹ بھی طلب کرلی  عدالت نے اساتذہ محمد صدیق ودیگر کی درخواستوں پر سماعت کی،گزشتہ روزعدالتی حکم پر گزشتہ روز سیکرٹری سکولز ایجوکیشن سارہ اسلم عدالت میں پیش ہوئیں، عدالت نے اساتذہ کی تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر ناراضی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اساتذہ کو تنخواہوں کی ادائیگی نہ ہونے پر عدالت حکم جاری کرے گی سرکاری افسر کی طرف سے عدالت کو بتایا گیا کہ محکمہ خزانہ کو تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے خط لکھ دیا گیا ہے، اساتذہ کی تنخواہوں کیلئے 30 کروڑ 95 لاکھ 84 ہزار روپے مانگے ہیں، درخواست گزاروں کے واجبات کی تصدیق کیلئے کمیٹی قائم کردی گئی  درخواست گزاروں کا موقف ہے کہ ہائیکورٹ نے محکمہ تعلیم کو تنخواہوں کی ادائیگی کا حکم دیا، چھ ماہ سے زائد عرصہ ہوگیا ہے ابھی تک تنخواہیں ادا نہیں کی گئیں، عدالت کے حکم پر عمل درآمد نہ کرکے توہین عدالت کی جارہی ہے، سیکرٹری سکولز ایجوکیشن اور دیگر حکام کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی عمل میں لائی جائے۔

مہلت

مزید :

صفحہ آخر -