شادی کے وقت دلہن کو دیے گئے تحفے اس کی ذاتی جائیداد ہیں، سپریم کورٹ

     شادی کے وقت دلہن کو دیے گئے تحفے اس کی ذاتی جائیداد ہیں، سپریم کورٹ

  

 اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)سپریم کورٹ نے قرار دیا ہیکہ شادی کے وقت دلہن کو دیے گئے تحفے اس کی ذاتی جائیداد ہیں، یہ تحائف شرعی قانون کے مطابق بیوی سے واپس نہیں لیے جاسکتے۔سپریم کورٹ میں جسٹس قاضی فائز عیسٰی اور جسٹس یحیٰی آفریدی پر مشتمل بنچ نے جائیداد کے تنازعے پر تحریری حکم نامہ جاری کر دیا۔جسٹس قاضی فائز عیسی نے 12 صفحات پر مشتمل فیصلے میں کہا کہ عورت کو اپنی جائیداد رکھنے اور کاروبار کرنے کا پورا حق ہے،عورت کا والدین اور شوہر سے میراث لینے کا حق واضح طور پر طے کیا گیا ہے۔عدالت کا کہنا ہیکہ شوہر اپنی بیویوں کی میراث کی فراہمی کے لیے وصیت کیا کریں، پاکستان میں اس متعلق قرآن مجید کے احکامات کو بھی نظر انداز کیا جاتا ہے،فیصلے میں قرآنی آیات کا بھی حوالہ دیا گیا ہے۔ 

سپریم کورٹ

مزید :

صفحہ اول -