وہ خاتون جو قدرتی طور پر ایچ آئی وی سے صحتیاب ہوگئی، مستقبل کے لیے بڑی امید پیدا ہوگئی

وہ خاتون جو قدرتی طور پر ایچ آئی وی سے صحتیاب ہوگئی، مستقبل کے لیے بڑی امید ...
وہ خاتون جو قدرتی طور پر ایچ آئی وی سے صحتیاب ہوگئی، مستقبل کے لیے بڑی امید پیدا ہوگئی

  

بیونس آئرس(مانیٹرنگ ڈیسک) ایچ آئی وی اور ایڈز تاحال لا علاج ہیں لیکن ایک سال کے دوران حیران کن طو رپر دوسری ایسی خاتون سامنے آ گئی ہے جو ایچ آئی وی کا شکار ہوئی لیکن پھر خودبخود اس کی یہ بیماری ختم ہو گئی۔ میل آن لائن کے مطابق یہ خاتون اپنی عمر کی 30کی دہائی میں ہے اور جنوبی امریکہ کے ملک ارجنٹائن کی رہائشی ہے۔ اس میں 2013ءمیں ایچ آئی وی کی تصدیق ہوئی تھی تاہم چند ہفتے قبل اس کا ٹیسٹ منفی آ گیا اور وہ اس مرض سے مکمل طور پر صحت مند ہو چکی ہے۔

رپورٹ کے مطابق پہلی خاتون امریکی شہر سین فرانسسکو کی رہائشی 67سالہ لورین ولنبرگ تھی، جس کے متعلق گزشتہ سال اگست میں انکشاف ہوا تھا کہ اس کا ایچ آئی وی کا مرض خود بخود ختم ہو چکا ہے اور وہ مکمل صحت یاب ہو چکی ہے۔ارجنٹائن سے اس دوسری خاتون کے سامنے آنے کا انکشاف گزشتہ دنوں امریکہ میں ہونے والی ایچ آئی وی ماہرین کی ایک بین الاقوامی میٹنگ میں سائنسدانوں نے کیا۔ ایچ آئی وی کی ماہر ڈاکٹر نتالیا لاﺅفر کا کہنا تھا کہ ا ن دو خواتین کا ملنا، جن کے جسم میں قدرتی طور پر ایچ آئی وی کا علاج کرنے کی صلاحیت موجود تھی،بہت بڑا سنگ میل ہے۔ ان خواتین پر تحقیق سے ایچ آئی وی کے علاج میں اختراعی کامیابی مل سکتی ہے اور دنیا میں اس وائرس میں مبتلا 3کروڑ 80لاکھ لوگوں کے علاج کی امید پیدا ہو سکتی ہے۔“

مزید :

تعلیم و صحت -