زائد وزن والے افراد کیلئے زبر دست خوشخبری،سائنس نے بناورزش و ڈائٹنگ چربی پگھلانے کا آسان ترین طریقہ بتا دیا

زائد وزن والے افراد کیلئے زبر دست خوشخبری،سائنس نے بناورزش و ڈائٹنگ چربی ...
زائد وزن والے افراد کیلئے زبر دست خوشخبری،سائنس نے بناورزش و ڈائٹنگ چربی پگھلانے کا آسان ترین طریقہ بتا دیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) موٹاپے سے پریشان لوگوں کے لیے خوشخبری ہے کہ محققین نے اس بیماری سے نجات پانے کا ایک آسان حل ڈھونڈ لیا ہے۔ نئی تحقیق کے مطابق پہاڑوں پر رہنے والے لوگ دوسروں کی نسبت بہت کم موٹاپے کا شکار ہوتے ہیں۔ محققین نے سطح سمندر سے 124میٹر اور 456میٹر بلند جگہ پر رہنے والے لوگوں کا آپس میں موازنہ کیا۔

مزیدپڑھیں:جیل جا کر قسمت کھل گئی،جو شرمناک کام باہر کرتاتھاوہ زبردستی دو خواتین نے اس کے ساتھ کر ڈالا

456میٹر بلندی پر رہنے والے لوگوں میں موٹاہونے کے شرح124میٹر بلندی پر رہنے والے لوگوں سے 13فیصد کم نکلی۔محققین کا کہنا ہے کہ بلندی پر رہنے سے لیپٹن نامی ہارمون کا اخراج زیادہ ہوتا ہے جس سے بھوک کم لگتی ہے،یہ ہارمون بھوک لگانے والے دیگر ہارمونز کو بھی کنٹرول کرتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اگر انسان کو بھوک کم لگے تو اس سے خوراک ہضم کرنے کے لیے استعمال ہونے والی توانائی کی بچت ہو گی اور اس توانائی کی بچت سے آکسیجن کا استعمال کم ہو جائے گا۔ بلندی پر زندہ رہنے کے لیے اپنایا گیا یہ طریقہ کارقدیم بھی ہو سکتا ہے کیونکہ بلندی پر خوراک کی فراوانی نہیں ہوتی۔

مزید : تعلیم و صحت