فوڈ سکیورٹی کو توانائی کے برابر ترجیح دینا ہو گی، چیئرمین پاکستان کسان ویلفیئرکونسل

فوڈ سکیورٹی کو توانائی کے برابر ترجیح دینا ہو گی، چیئرمین پاکستان کسان ...

فیصل آباد(بیورورپورٹ)پاکستان کسان ویلفیئرکونسل کے چیئرمین چوہدری عبداللطیف سہو نے کہاہے کہ دو سال بعد پاکستان کی آبادی 20کروڑ سے تجاوزکر جائیگی جبکہ مذکورہ آبادی کیلئے 29 ملین ٹن سے زائد گندم کی ضرورت پوری کرنے کیلئے فوڈ سکیورٹی کو توانائی کے برابر ترجیح دینا ہو گی جس کیلئے سائنس و ٹیکنالوجی سمیت زراعت میں وسیع سرمایہ کاری کیلئے فوری اقدامات کرناہوں گے ۔ انہوں نے بتایاکہ گزشتہ پانچ برسوں سے گندم کی پیداوار 25 ملین ٹن پر جمود کا شکار ہے جس کی بنیادی وجہ کسانوں کو وقت پر نہری پانی، کھادسمیت دیگر زرعی مداخل کی عدم دستیابی اور بعد از برداشت مارکیٹنگ جیسے انتظامی مسائل کو قرار دیا جاتا رہا ہے اور آبادی کے مقابلہ میں غذائی پیداوار میں کمی سے ملک میں بھوک سے متاثر افراد کی تعداد خطرناک حد تک بڑھ جائے گی جس سے نہ صرف مستقبل میں خطرناک مسائل پیدا ہونگے بلکہ دیگر ترقیاتی اہداف بھی بری طرح متاثر ہونگے۔ انہوں نے کہاکہ وزیراعظم محمد نواز شریف اور وزیر اعلیٰ پنجاب محمدشہباز شریف زرعی ترقی کیلئے بھرپور اقدامات کررہے ہیں مگر نئے مالی سال کے بجٹ میں زرعی شعبہ کیلئے بالعموم جبکہ چھوٹے کاشتکاروں کیلئے بالخصوص خصوصی ریلیف پیکج کااعلان کرناہو گا

تاکہ وہ زیادہ سے زیادہ زرعی اجناس کی کاشت کی جانب توجہ دے سکیں۔انہوں نے کہاکہ اگر چھوٹے کاشتکاروں کیلئے سستی بجلی سمیت سبسڈی پر معیاری بیجوں ، کھادوں ، زرعی آلات ، زرعی ادویات کی فراہمی یقینی بنائی جائے تو کوئی وجہ نہیں کہ کاشتکار مکمل دلجمعی کے ساتھ کام کرکے ملک کوغذائی خود کفالت سے ہم آہنگ نہ کر سکیں۔

مزید : کامرس