متحدہ محاذ اساتذہ کا پنجاب اسمبلی کے سامنے احتجاجی دھرنے کا سلسلہ جاری

متحدہ محاذ اساتذہ کا پنجاب اسمبلی کے سامنے احتجاجی دھرنے کا سلسلہ جاری

لاہور( خبرنگار) متحدہ محاذ اساتذہ نے اپنے مطالبات کے حق میں گزشتہ دن تیسرے روز بھی پنجاب اسمبلی کے سامنے فیصل چوک میں احتجاجی دھرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہے۔ اس موقع پر احتجاجی دھرنے میں پنجاب ٹیچرز یونین کے سیکرٹری جنرل محمد کاشف شہزاد چودھری، متحدہ محاذ اساتذہ پنجاب کے چیئرمین طارق محمود، صدر محمد صفدر اور متحدہ محاذ اساتذہ کے سابق صدر حافظ عبدالناصر سمیت ہیڈ ماسٹرز ایسوسی ایشن کے صدر رانا سلطان محمود سمیت مختلف اساتذہ کی تنظیموں کے نمائندوں سمیت درجنوں اساتذہ رات تک احتجاجی دھرنے میں شریک رہے ۔ اس موقع پر اساتذہ فیصل چوک سے گورنر ہاؤس تک احتجاجی ریلی نکالنے کی کوشش کی تو پولیس نے اساتذہ کے احتجاجی دھرنے کے ارد گرد اور مال روڈ پر گورنر ہاؤس کی جانب کھاردار تاریں لگا کر رکاوٹیں کھڑی کر دیں اور اساتذہ کو گورنر ہاؤس کی جانب جانے سے روک دیا اور اساتذہ سے احتجاجی دھرنا ختم کرنے کے لئے مذاکرات کرنے کی کوشش کی تو اساتذہ نے وزیر تعلیم یا چیف سیکرٹری کے علاوہ کسی دوسرے حکومتی نمائندے سے مذاکرات کرنے سے انکار کر دیا۔جس پر پنجاب حکومت کی انتظامیہ نے صورتحال سے چیف سیکرٹری کو آگاہ کیا جس پر چیف سیکرٹری پنجاب نے اساتذہ سے مذاکرات کے لئے کمیٹی تشکیل دی جس پر اساتذہ نے گورنر ہاؤس تک احتجاجی ریلی کو وقتی طورپر موخر کردیا۔ احتجاجی دھرنے سے اساتذہ سے خطاب کرتے ہوئے طارق محمود، سلطان چودھری اور کاشف چودھری نے کہا کہ مطالبات کی منظوری تک احتجاجی دھرنا جاری رکھاجائے گا ۔ اس میں کسی قسم کا کمپرو مائز نہیں کیا جائے گا۔ مطالبات کی منظوری تک لاہور سمیت پنجاب بھر میں تعلیمی بائیکاٹ کرتے ہوئے دھرنا جاری رکھا جائے گا۔

مزید : علاقائی