بین الاقوامی ادارے نے سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں کے دل کی بات کہہ دی ،حکومت پر سنگین ترین الزام

بین الاقوامی ادارے نے سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں کے دل کی بات کہہ دی ...
بین الاقوامی ادارے نے سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں کے دل کی بات کہہ دی ،حکومت پر سنگین ترین الزام

  

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) انسانی حقوق کے بین الاقوامی ادارے ہیومن رائٹس واچ (ایچ آر ڈبلیو) کی گزشتہ روز جاری کی جانے والی رپورٹ میں سعودی عرب کو غیر قانونی تارکین وطن کے ساتھ بدترین سلوک کا مرتکب قرار دیا گیا ہے اور یہ بھی بتایا گیا ہے کہ 2013ءمیں شروع کی جانے والی مہم کے نتیجے میں غیر قانونی تارکین وطن کی ایک بھاری تعداد کو ان کے بنیادی حقوق کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ملک بدر کیا گیا ہے۔

مزیدپڑھیں:ارب پتی بننے کیلئے کیا چیز سب سے زیادہ ضروری ہوتی ہے؟دنیا کے مشہور ترین ارب پتی کی بیوی نے بتادیا

چھتیس صفحات پر مبنی رپورٹ "Detained, Beaten, Deported" میں 60 تارکین وطن، جنہیں یمن اور صومالیہ واپس بھیجا گیا، کے انٹرویوز پر مبنی تفصیلات شائع کی گئی ہیں۔ رپورٹ کے مطابق ان افراد کو بدترین حالات میں قید رکھا گیا، متعدد کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا، انہیں ملک بدری کے فیصلے کو چیلنج کرنے کا قانونی حق نہیں دیا گیا اور ایسی جگہوں پر واپس بھیجا گیا جہاں ان کی جان کو خطرہ ہوسکتا تھا۔

رپورٹ کے مطابق یہ سلسلہ اپریل 2013ءسے جاری ہے جب لیبر لاءمیں کی گئی تبدیلی کے تحت پولیس کو یہ اختیار حاصل ہوگیا کہ وہ غیر قانونی تارکین وطن کو حراست میں رکھ سکتی ہے اور کوئی بھی فرد جو قانونی کفیل کے تحت کام نہیں کررہا اسے ملک بدر کرسکتی ہے۔

مزید : انسانی حقوق