وزیراعظم، صدر اور وزیر داخلہ سے پھانسی موخر کرنے کی ہمدردانہ اپیل کرتی ہوں: نگہت مرزا

وزیراعظم، صدر اور وزیر داخلہ سے پھانسی موخر کرنے کی ہمدردانہ اپیل کرتی ہوں: ...
وزیراعظم، صدر اور وزیر داخلہ سے پھانسی موخر کرنے کی ہمدردانہ اپیل کرتی ہوں: نگہت مرزا

  


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) صولت مرزا کی اہلیہ نگہت مرزا نے وزیراعظم نواز شریف، صدر مملکت ممنون حسین اور وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے پھانسی کی سزا موخر کرنے کی اپیل کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق نگہت مرزا نے نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر کراچی میں امن قائم کرنا ہے تو صولت مرزا کی پھانسی موخر کر کے کیس ری اوپن کیا جائے اور ملوث لوگوں کو بھی سزا دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف، صدر مملکت ممنون حسین اور وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے ہمدردانہ اپیل پر غور کریں اور صولت مرزا کی پھانسی موخر کر کے دوبارہ تفتیش کی جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ پھانسی روک کر تحقیقات کی جائیں اور اصل مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔ ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ وہ صولت مرزا سے ملاقات کر چکی ہیں اور انہیں اب بھی امید ہے کہ ان کی اپیل پر غور کیا جائے گا اور صولت مرزا کی پھانسی موخر کی جائے گی۔ ایم کیو ایم کی قیادت سے کچھ کہنے سے متعلق سوال پر ان کا کہنا تھا کہ وہ ایم کیو ایم کی قیادت سے کچھ بھی نہیں کہنا چاہتیں۔

نگہت مرزا کا کہنا تھا کہ حکومت کی جانب سے ابھی تک انہیں کوئی جواب نہیں ملا تاہم وہ ابھی تک انتظار کر رہی ہیں اور انہیں امید ہے حکومت کراچی کے امن کی خاطر ضرور ان کی اپیل پر غور کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ صولت مرزا ایک ایسا شخص ہے جو پہلی مرتبہ طاقت کے خلاف گواہی دینے کیلئے کھڑا ہوا ہے اور سب کے چہرے نقاب کرنا چاہتا ہے۔ صولت مرزا کو پھانسی دے دی گئی تو تمام ثبوت بھی اس کے ساتھ ہی ختم ہو جائیں گے اورشاہد حامد کا کیس بند ہو جائے گا۔ جن لوگوں نے صولت مرزا سے قتل کروائے ہیں انہیں سزا دی جائے کیونکہ اگر کراچی میں امن لانا ہے تو ایسا کرنا ضروری ہے ورنہ کراچی میں قتل و غارت کا سلسلہ کبھی بند نہیں ہو سکے گا۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں