چند ماہ کے دوران پنجاب میں سرمایہ کاری کا عمل کئی گنا تیز ہو گیا

چند ماہ کے دوران پنجاب میں سرمایہ کاری کا عمل کئی گنا تیز ہو گیا

لاہور (کامرس رپورٹر)مثبت حکمت عملی اور جامہ منصو بہ بندی کے باعث گزشتہ چند ماہ کے دوران پنجاب میں سرمایہ کاری کا عمل کئی گنا تیز ہو گیا ہے۔ اس امر کا انکشاف چیئرمین پنجاب سرمایہ کاری بورڈ کے نئے چیئرمین مظفر خواجہ نے گزشتہ روز کراچی میں ممتاز سرمایہ کاروں سے ملاقات کے دوران کیا۔ ان سرمایہ کاروں میں عارف حبیب (عارف حبیب گروپ)، زیاد بشیر (گل احمد)، بشیر علی محمد (گل احمد)، ندیم الٰہی (مینیجنگ ڈائریکٹر اور کنٹری ہیڈ ریسورس گروپ) اور احسن ملک (چیف ایگزیکٹو پاکستان بزنس کونسل) شامل تھے۔ ملاقات کا مقصد پہلے سے موجود کمپنیوں کے سرمایہ کاری کے امکانات پر غور و خوص کرنا تھا۔

پنجاب میں سرمایہ کاری کے بھرپور امکانات پر روشنی ڈالتے ہوئے مظفر خواجہ نے کہا کہ ’’سرمایہ کاری کے عمل میں تیزی کی وجہ پاک چین اقتصادی راہداری ہے۔ ملائشیا، جرمنی، ترکی اور جنوبی کوریا جیسے ممالک پنجاب کو سرمایہ کاری کی اگلی منزل کے طور پر دیکھ رہے ہیں۔انھوں نے مزید کہا کہ حکومت پنجاب 2018ء تک 8 فیصد اقتصادی نشوونما کا ہدف حاصل کرنے کے لیے قانونی ضوابط میں تبدیلی لا رہی ہے جس سے ملکی اور غیر ملکی سرمایہ کاروں کو درپیش رکاوٹیں کم ہو جائیں گی۔

مزید : کامرس


loading...