ایچ آئی سی میں جب تک سیاسی بھرتیاں جاری رہیں گی،کارکردگی بہتر نہیں ہوگی، اکرم رضوی

ایچ آئی سی میں جب تک سیاسی بھرتیاں جاری رہیں گی،کارکردگی بہتر نہیں ہوگی، ...

لاہور( خبرنگار) انجمن طلبہ اسلام کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات سید وقار علی ،ناظم لاہور ڈوثیرن محمد اکرم رضوی ،ناظم ضلع لاہور عامر اسماعیل نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ دنیا بھر کی پانچ سوبہترین جامعات کی درجہ بندی میں پاکستانی کسی ایک بھی جامعہ کا بہترین یونیورسٹیوں میں نہ آنے سے ہائر ایجوکشن کمیشن کی کارکردگی کی قلعی کھل گئی ہے ۔ہائیر ایجوکشن کمیشن میں جب تک سیاسی بھرتیاں جاری رہیں گی اسی طرح دنیا بھر میں پاکستان کی جگ ہنسائی ہوتی رہے گی ۔ایج ای سی کی خراب کارکردگی پر چےئرمین ایج ای سی ڈاکٹر مختاز احمد کو فوری مستعفی ہو جانا چاہیے تھا ۔ وفاقی وزیر تعلیم احسن اقبال کا ہائر ایجوکشن کمیشن کا بجٹ 48ارب سے 78ارب بڑھانا غیر ذمہ دارنہ اور احمقانہ فیصلہ ہے ۔ایج ای سی قومی خزانے پر بوجھ ہے ۔اداروں کا بجٹ کار گردگی کے حساب سے بڑھایا جانا چاہیے۔تعلیمی بجٹ جی ڈی پی کا 5فیصد اضافہ کیا جائے جبکہ 22مئی کوقومی پری بجٹ کانفرنس منعقد کروائی جائے گی۔ جس میں تعلیمی مسائل پر روشنی ڈالنے کے لئے ماہرین تعلیم ،اساتذہ اور طالبعلم راہنماء ملک بھر سے شرکت کریں گے ، ہائر ایجو کیشن کمیشن کی ناقص کارکردگی کی وجہ سے پاکستان یونیورسٹیز رینکنگ ریس میں سب سے پیچھے رہ جانا انتہائی افسوسناک ہے ۔ دنیاکی 500بہترین جامعات میں بھی ہماری کوئی جامعہ بھی جگہ نہ بنا سکی ان خیالات کا اظہار انہوں نے موجودہ ملکی حالات پر منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ہاں شعبہ تعلیم کو ہمیشہ نظر انداز کیا جاتا رہا ہے تعلیم کے لیے جو بجٹ رکھا جاتا ہے وہ پہلے ہی نا کافی ہے اور اس کا بھی بیشتر حصہ کرپشن کی نذر ہو جاتا ہے اب تک اربوں روپے ہائر ایجوکیشن کمیشن کے بجٹ کی مدمیں اڑا دئے گئے ہیں اور سرکاری جامعات میں بھی فیسیں آسمانوں سے باتیں کر رہی ہیں مگر کار کردگی زیرو ہے۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا قوم کے اربو ں روپے ہڑپ کرنے والے ادارے ہائر ایجوکشن کمیشن کی انکوائری کی جائے جس کیلئے طلباء تنظیموں اور سول سوسائٹی کے نمائندوں کو بھی شامل کیا جائے تاکہ انصفاف کے تقاضے پور ہو سکیں۔۔۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...