ڈولفن فورس کی حاضری اور فزیکل فٹنس کے حوالے سے اجلاس

ڈولفن فورس کی حاضری اور فزیکل فٹنس کے حوالے سے اجلاس

ا ہور (کرائم رپورٹر)حالیہ دنوں لاہور میں شہریوں کے تحفظ ، سٹریٹ کرائم پر قابو پانے اور شہر بھر کی سڑکوں اور گلیوں کی کلوز مانیٹرنگ کے لئے شروع کی جانے والی ڈالفن فورس کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے لئے گز شتہ روز سنٹرل پولیس آفس لاہور میں انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب مشتاق احمد سکھیرا کی سربراہی میں ایک اعلیٰ سطحی اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں ایڈیشنل آئی جی ٹریننگ کیپٹن (ر) عثمان خٹک، ایڈیشنل آئی جی ویلفےئر اینڈ فنانس سہیل خان، ایڈیشنل آئی جی آپریشنز/انوسٹی گیشن پنجاب کیپٹن (ر) عارف نواز، ایڈیشنل آئی جی اسٹیبلشمنٹ پنجاب ڈاکٹر عارف مشتاق،سی سی پی او لاہور کیپٹن (ر) امین وینس،کمانڈنٹ پنجاب کانسٹیبلری حسین اصغر، ڈی آئی جی اسٹیبلشمنٹ I- اظہر حمید کھوکھر، ڈی آئی جی اسٹیبلشمنٹ II-سلمان چوہدری، ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹرزبی اے ناصر،ڈی آئی جی آپریشنز لاہور ڈاکٹر حیدر اشرف، اے آئی جی آپریشنز احسن یونس ،اے آئی جی لاجسٹکس ہمایوں بشیر تارڑاور اے آئی جی ڈویلپمنٹ کامران خان کے علاوہ سی پی او کے دیگر افسران نے شرکت کی۔سی سی پی او لاہور، کیپٹن (ر )امین وینس اور ڈی آئی جی آپریشنز لاہور، ڈاکٹر حیدر اشرف نے آئی جی پنجاب کو اس سلسلے میں تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ڈالفن فورس کی فزیکل فٹنس مانیٹرنگ کے ساتھ ساتھ ان کی کارکردگی کو روزانہ کی بنیادوں پر مانیٹر کیا جا رہا ہے جبکہ ان کی حاضری کو بائیومیٹرک سسٹم کے ذریعے یقینی بنایا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ روزانہ کی بنیادوں پر ہر بیٹ کی پٹرولنگ اورسنیپ چیکنگ کی رپورٹ کے ساتھ ساتھ ان کو جاری کیے گئے اسلحے کی مانیٹرنگ بھی جاری ہے۔ آئی جی پنجاب کو بتایا گیا کہ اب تک ڈالفن فورس لاہور کے اندر 56ہزار 3سو کلومیٹر کافاصلہ طے کر چکی ہے۔

جبکہ صرف اپریل کے مہینے میں 15پر 1ہزار 5سو 64کالز موصول ہوئی ہیں جس کا رسپانس ٹائم 9سے 10منٹ بنتا ہے۔ اس کے علاوہ اسی عرصے میں سڑک کے اوپر 18کریمنلز کو کو گرفتار کیا گیا جبکہ ڈالفن فورس نے 22ہتھیار بھی برآمد کیے اور 40ہزار 2سو 76گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کو چیک کیا اور 67گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کو بند کیا جبکہ 18چوری شدہ گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کو برآمد کرنے میں مدد کی۔

مزید : علاقائی


loading...