ٹریفک پولیس میں من پسند علاقوں میں تعیناتیوں کیلئے سفارش اور رشوت کا سلسلہ جاری

 ٹریفک پولیس میں من پسند علاقوں میں تعیناتیوں کیلئے سفارش اور رشوت کا ...

لاہور(کرائم رپورٹر) سفا رش نہ رکھنے والے ٹر یفک وارڈنز کی ڈیو ٹیا ں اورنج لائن ٹرین منصوبے کی تعمیر کے علا قو ں میں لگا دی گئی ہیں جبکہ دوران ڈیوٹی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے وارڈنز کو 10ہزار روپے نقد انعام دینے کا بھی اعلا ن کیا گیا تھا جو کہ کسی حق دار کو نہیں مل سکا ۔ محکمے میں تعینا تی اور انعا ما ت کے لیے پسند نا پسند کا خیا ل رکھا جا تا ہے۔بیشتر وارڈن اورنج لائن ٹرین منصوبے پر ڈیو ٹی کر نے کی وجہ سے بیما ر ہو گئے ہیں۔ وا ضح رہے چیف ٹریفک آفیسرلاہور طیب حفیظ نے دوران ٹریفک کی روانی یقینی بنانے اور شہریوں کو ہر ممکن سفری سہولیات کی فراہمی کیلئے وارڈنز کا دربار منعقد کیا تھا ۔سی ٹی او نے کہاتھا کہ وارڈنز عوام کی خدمت کا جذبہ لے کر کام کریں،انکی فلاح وبہبود کیلئے بھی ہر ممکن اقدامات کےئے جا رہے ہیں،دوران ڈیوٹی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے وارڈنز کو 10ہزار روپے تک نقد انعام دیا جائے گا ۔ ڈیوٹی کے ساتھ ساتھ ارد گرد کے ماحول پر کڑی نظر رکھنے مشکوک افراد کے بارے میں متعلقہ پولیس یا افسران کو فوری اطلاع دینے کا حکم دیا گیا۔ دربار میں چیف ٹریفک آفیسر لاہور طیب حفیظ چیمہ،ایس پی ہیڈ کوارٹرزامتیازالرحمن اور دیگر سینئر افسران بھی موجود تھے۔انہوں نے کہا کہ اورنج لائن ٹرین پراجیکٹ پر تمام متعلقہ محکمے باہمی رابطے سے مصروف عمل ہیں ،سٹی ٹریفک پولیس نے پراجیکٹ والی جگہوں پرتین شفٹوں میں وارڈنز تعینات کےئے تاکہ ٹریفک کی روانی میں پرابلم نہ ہو۔انہوں نے کہا کہ گردوغبار سے بچاؤ کیلئے وارڈنز کیلئے جدید ماسک ،موسم کی شدت کے پیش نظر جیکٹس بھی تقسیم کردی گئیں۔علاوہ ازیں پراجیکٹ کے تعمیراتی علاقوں میں ٹریفک کے بہاؤ میں مزید بہتری کیلئے 650کونز بھی مہیا کی گئیں تاکہ دوطرفہ ٹریفک معمول کے مطابق رواں دواں رہے۔سی ٹی او نے کہا کہ کہ وارڈنز کا کردار ہمارے معاشرے میں رول ماڈل ہے جو کہ ہر وقت براہ راست شہریوں سے وابستہ رہتے ہیں۔ وارڈنز اپنی ڈیوٹی کو عبادت سمجھ کر کریں اور ہمہ وقت جذبہ خدمت خلق سے سرشار ہوں۔ انہوں نے کہا کہ ہم سب کو مل جل کر شہریوں کے مسائل حل کرنا ہوں گے۔ وارڈنز ٹریفک کے بہاؤ کو برقرار رکھنے کے ساتھ ساتھ شہریوں کو ٹریفک قوانین بارے ایجوکیٹ کرنے کیلئے اپنا مثبت کردار ادا کریں تاہم اس دوران شہریوں سے رویہ انتہائی نرم اور شائستہ رکھیں۔سی ٹی او نے کہا کہ ٹریفک کی روانی اور شہریوں کی مدد کے سلسلے میں ٹریفک پولیس کی کوششیں قابل ذکر ہیں اس حوالے سے وارڈنز کو جدید ترین آلات سے آراستہ کیا جا رہا ہے۔اس حوالے سے ٹر یفک وارڈن نے اپنا نا م شا ئع نہ کر نے کی شر ط پر ہے کہ محکمے میں پسند نا پسند کا کیا ل رکھا جا تا ہے کو ن کہتا ہے کہ ٹر یفک پو لیس کر پشن سے پا ک ہے ۔اس محکمے میں جس قدر مبینہ کر پشن ہے یہ محکمہ پنجا ب پو لیس کو بھی بہت پیچھے چھو ڑ گیا ہے۔من پسند جگہو ں پر تعینا تی حا صل کر نے کے لیے سفارش کے سا تھ سا تھ مبینہ رشو ت کا بھی سہا را لینا پڑ تا ہے۔محکمے میں ٹر یفک وارڈن سے لیکرسی ٹی او کے سٹا ف تک سبھی پیسے کما رہے ہیں۔جبکہ سیکٹر انچارج اور مختلف سنٹروں پر تعینا تی حا صل کر نے والے لا کھو ں روپے ما ہا نہ کما نے میں مصروف ہیں۔ بیشتر وارڈن اورنج لائن ٹرین منصوبے پر ڈیو ٹی کر نے کی وجہ سے بیما ر ہو گئے ہیں۔ چیف ٹر یفک آفیسر لا ہور طیب حفیظ چیمہ نے اس با ر ے میں مو قف اختیا ر کیا ہے کہ محکمے کو کر پشن سے پا ک کر دیا ہے ۔من پسند جگہو ں پر تعینا تی کی خبر یں غلط ہیں۔

مزید : علاقائی


loading...