اقتصادی پالیسیوں کے تسلسل سے معیشت میں انقلاب آ ئیگا،میاں رحمان عزیز

اقتصادی پالیسیوں کے تسلسل سے معیشت میں انقلاب آ ئیگا،میاں رحمان عزیز
اقتصادی پالیسیوں کے تسلسل سے معیشت میں انقلاب آ ئیگا،میاں رحمان عزیز

  


لاہور ( اسد اقبال)حکو مت وقت کی ملکی معاشی پالیسیاں سرمایہ کاری کوفروغ اور انڈسٹری کو ریلیف دینے میں اہم کردا ر ادا کررہی ہیں۔ صنعتکاروں کو توقع ہے کہ وفاقی حکو مت آئندہ مالی سال کا بجٹ برائے 2016-17 بزنس فرینڈلی پیش کر کے معیشت کو مستحکم کرنے میں کلیدی کردار ادا کر ے گی تاہم ضرورت اس امر کی ہے کہ حکو مت پری بجٹ سیشنز کے تحت جو تجاویز فیڈریشن چیمبرز نے دی ہیں ان کو بجٹ کا حصہ جبکہ ایف بی آر فنانس بل 2016کے تحت کر لے تو معیشت پازیٹو ڈائریکشن پر ہو گی ۔ان خیالات کا اظہار فیڈریشن آف پاکستان چیمبر زآف کامرس اینڈ انڈسٹری(ایف پی سی سی آئی) کے ریجنل چےئرمین میاں رحمان عزیز نے گزشتہ روز "پاکستان "بجٹ تجاویز میں کیا ۔ میاں رحمن عزیز نے کہا کہ حکو مت کی اقتصادی پالیسیاں تسلسل سے چلے تو ملکی معیشت میں انقلاب آ جائے گا کیونکہ پالیسی کے تحت حکو مت مختلف ریفارمز لے کر آ رہی ہے جبکہ ایس ایم ایز کے لیے شرائط میں نرمی کر دی گئی ہے کہ ایس ایم ایز پبلک سیکٹر کا حصہ بن سکتی ہیں جس سے چھوٹے صنعتکاروں کو ریلیف اور کاروبار کو فروغ ملے گا ۔ انھوں نے کہا کہ حکو مت آئندہ مالی سال کے بجٹ میں ٹیکس دہندگان پر ٹیکسوں کا مذید بو جھ ڈالنے کی بجائے نادہندگان کو ٹیکس نیٹ کا حصہ بنائے ۔انھوں نے کہا کہ امید ہے کہ وزارت خزانہ ملکی معیشت کو پروان چڑھانے کے لیے تجاویز کو بجٹ کا حصہ بنائے گی ۔میاں رحمن عزیز نے کہا کہ توانائی بحران کو ختم کرنے کے لیے چھوٹے ڈیموں کی فوری تعمیر کا اعلان کیا جائے۔ سرکاری محکموں میں بجلی کا استعمال کم کرایا جائے۔ کم قیمت بجلی کے پیداواری منصوبوں کی شاٹ ٹرم اور لونگ ٹرم حکمت عملی بنائی جائے۔اُنھوں نے کہا کہ تاجر برادری پراُمید ہے کہ میاں محمد نواز شریف ملکی معاشی ترقی اور خوشحالی کے لیے تاجر برادری کی توقعات پر پورا اُترتے ہوئے بجٹ میں معاشی استحکام کے لیے ہر ممکن اقدامات کرینگے کیونکہ اُنکا وسیع معاشی وسیاسی تجربہ ملک وقوم کو ترقی کیطرف لے جائے گا ۔

میاں رحمان عزیز

مزید : صفحہ آخر


loading...