حکمران عوام کو ریلیف دینے میں نا کام ہو گئے ‘ سیاسی و مذہبی رہنما

حکمران عوام کو ریلیف دینے میں نا کام ہو گئے ‘ سیاسی و مذہبی رہنما

ملتان (سٹی رپورٹر) حالیہ آنے والے بجٹ میں غریب عوام کو زیادہ سیا زیادہ ریلیف دیا جائے گذشتہ کئی دنوں سالوں کو ملکی بجٹ میں غریب عوام کو کسی قسم کا کوئی ریلیف نہ دےئے جانے کے (بقیہ نمبر7صفحہ12پر )

باعث عوام خود کشیوں پر مجبور ہیں لیکن افسوس حکمرانوں کے کانوں میں کسی قسم کی جوں کی توں نہی رینگ رہی جس کی وجہ سے غریب عوام مزید مشکلات کا شکار ہو کر رہ گئے ہیں اگر آنے والے بجٹ میں عوام کو ریلیف نہ دیا گیا تو عوام شدید احتجاج پر مجبور ہو جائیں گے ان خیا لات کا اظہار مختلف سماجی سیاسی مذہبی رہنماؤں سے پاکستان سے اظہار خیا ال کرتے ہوئے کیا اس موقع پر جماعت اسلامی ملتان کے امیر میاں آصف محمود اخوانی نے کہاہے کہ پاکستان کے بجٹ میں غریب عوام کو مدنظر نہیں رکھا جاتا بلکہ ملک کا بجٹ وہ لوگ بناتے ہیں جن کو آتے گھی کا ریٹ تک معمول نہی ہو تا نہ ہی انہوں نے کبھی گھر کے سودے سلف خریدے ہو تے ہیں انہوں نے کہاہے کہ ملک کا بجٹ ان لوگوں کو بنانا چاہیے جو غریب کے مسائل جانتا ہو مر کزی جمعیت اہلدیث کے صوبائی رہنما علامہ عنا یت اللہ رحمانی نے کہاہے کہ حکمران عوام کو ریلیف دینے میں مکمل طور ناکام ہو گئے ہیں انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ حالیہ بجت میں عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دیا جائے سماجی رہنماء ملک محمد عمر کمبوہ نے کہاہے کہ غریب عوام کو ریلیف دےئے بغیر ملک ترقی کی راہ پر گامزن نہی ہو سکتا انہوں نے کہاہے کہ ملک کے دو فیصد اشرافیہ نے ملک پر قبضہ کر رکھا ہے بجٹ سمیت ملکی معاملات میں وہ ایسی پالیسی بناتے ہیں جس سے غریب کو کسی قسم کا فائدہ ہونے کے بجائے بلکہ شدید نقصان ہوتا ہے جس کی وجہ سے غریب عوام شدید مشکلات کا شکار ہیں سماجی رہنما ء شاہد محمود انصاری نے کہاہے کہ ملک کا بجٹ غریب عوام کے مسائل کو سامنے رکھ کر بنایا جائے تاکہ وہ زندہ رہنے میں آسانی ہو سکے احکمرانوں کی جانب سے بنائے گئے بجٹ سے تو غریب عوام کو مرنا بھی مشکل ہو گیا ہے سماجی مذہبی رہنما مخدوم سید طارق عباس شمسی نے کہاہے کہ بجٹ میں ملک کے98فیصد عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دیا جائے بکہ غریب عوام کو کے مسائل اور وسائل کو دیکھ کر بجٹ بنایا جائے ۔

بجٹ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...