لتی احکامات سے انکار پر ایم ایس نشتر ہسپتال کی سرزنش، ملازمت کا تقرر نامہ جاری کرنے، سماعت 12مئی تک ملتوی کرنے کا حکم

لتی احکامات سے انکار پر ایم ایس نشتر ہسپتال کی سرزنش، ملازمت کا تقرر نامہ ...

عدا

ملتا ن(خبر نگا رخصو صی)ہائیکورٹ ملتان بنچ نے عدالتی احکامات سے انکار کرنے پر ایم ایس نشتر ہسپتال کی سرزنش کرتے ہوئے(بقیہ نمبر41صفحہ12پر )

ملازمت کاتقررنامہ جاری کرنے اور سماعت 12 مئی تک ملتوی کرنے کاحکم دیا ہے فاضل عدالت نے یہ احکامات ملتان کے محمد اشرف کی درخواست پر سماعت کے بعد دئیے ہیں جس میں مؤقف اختیار کیا گیا تھاکہ پرنسپل نشتر ہسپتال و کالج کی جانب سے مختلف آسامیاں مشتہر کی گئیں جس پر درخواست گذار نے سیکورٹی گارڈ کی آسامی کے لئے رجوع کیااور انٹرویو کے بعد درخواست گذار کو دیگر امیدواروں کی طرح کامیاب قراردیا گیا جس پر تمام قانونی ضروریات پوری کرنے کے بعد ایم ایس نشتر ہسپتال سے رجوع کیا تو پہلے لیت ولعل کرنے کے بعد اب تقررنامہ جاری کرنے سے انکار کر دیاہے اور یہ عمل سراسر غیر قانونی ہے اس لئے درخواست گذار کو تقرر نامہ جاری کرنے کا حکم دیا جائے اس ضمن میں فاضل عدالت کے حکم پرایم ایس ڈاکٹر عاشق حسین ملک عدالت پیش ہوئے اور بیان دیا کہ ہسپتال انتظامیہ کو صوبائی سیکرٹری کی عائد پابندی کی وجہ سے تقررنامہ جاری نہیں کر رہی ہے جس پر عدالت نے قرار دیا کہ میرٹ پر تقرری عمل میں لائی گئی ہے اس لئے 2 روز میں تقرر نامہ جاری کیاجائے جس پر ایم ایس نے جواب دیا کہ وہ مصروف ہیں اس لئے 7 روز تک تقرر نامہ جاری کردیں گے جس پر عدالت نے احکامات سے انکارکرنے پرایم ایس کی سرزنش کی اور ایک گھنٹہ میں تقررنامہ جاری کرنے کی ہدایت کی تاہم کونسل کی درخواست پر 2 روز میں تقرر نامہ جار ی کرنے کی مہلت دیتے ہوئے سماعت ملتوی کرنے کی ہدایت کی ہے۔

سرزنش

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...