چارسدہ ،ناروا لوڈشیڈنگ ،اوور بلنگ کیخلاف تاجروں کی ہڑتال

چارسدہ ،ناروا لوڈشیڈنگ ،اوور بلنگ کیخلاف تاجروں کی ہڑتال

چارسدہ (بیورورپورٹ) تنگی میں بجلی کے ناروا لوڈ شیڈنگ ،اوور بلنگ اور ناجائز جرمانوں کے خلاف مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال اور احتجاجی کیمپ کا انعقاد۔ تنگی سب ڈویڑن کے کرپٹ ملازمین کو ضلع بدر کرنے کا مطالبہ ۔ احتجاجی مظاہرین نے تعلیمی ادارے بند کرکے ٹریفک کا نظام درہم برہم کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق قومی ایکشن کمیٹی تنگی کی کال پر تنگی تحصیل اور مضافاتی علاقوں میں واپڈا کے خلاف احتجاج کے حوالے سے مساجد میں اعلانات پر لبیک کہتے ہوئے تنگی کے تاجروں نے مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال کیا جبکہ سول سوسائٹی اور دیگر تنظموں نے بھی احتجاج میں مظاہرے میں بھر پور شرکت کی ۔ احتجاجی مظاہرین نے تعلیمی اداروں کو بند کر کے طلبہ کو بھی احتجاج میں شامل کیا ۔ احتجاجی مظاہرے میں اے این پی ،قومی وطن پارٹی ،جے یو آئی ،جے آئی، تحریک انصاف، خدمت کمیٹی تنگی اوردیگر پارٹیوں کے قائدین اور دیگر مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے بھی کثیر تعداد میں شرکت کی۔مظاہرین نے تنگی موڑ میں پشاور روڈ پر روکاوٹیں کھڑی کرکے ہرقسم ٹریفک کیلئے بند کیا ۔اس موقع پر خطاب کر تے ہوئے ہمایون خٹک، عارف پراچہ ، مفتی گوہر علی ، سید الحق ، صدیق اللہ ،عمرا خان اور دیگر بجلی کی ناروا لوڈ شیڈنگ پر غم وغصہ کا اظہار کیا اور کہا کہ تنگی فیڈر پر 95فیصد ریکوری کے باوجود 20گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ سمجھ سے بالا تر ہے ۔ مقررین نے واپڈا ملازمین عبد اللہ ، امتیاز سلیم ، ارشد اللہ اور عالمزیب کی فوری تبادلے کا مطالبہ کیا۔بعدا زاں اسسٹنٹ کمشنر تنگی محمد خان اور ڈی ایس پی تنگی سجاد خان نے کامیاب مذاکرات کے بعد احتجاجی مظاہرین کو روڈ کھولنے پر راضی کیا جس کے بعد مظاہرین احتجاجی کیمپ میں بیٹھ گئے اور لوڈ شیڈنگ کے خاتمے تک احتجاجی دھرنا جاری رکھنے کا اعلان کیا۔

مزید : کراچی صفحہ آخر


loading...