سعودی شہری کی انٹرنیٹ کے ذریعے نوعمر لڑکی سے دوستی اور پھر پہلی ملاقات میں ہی ایسا شرمناک ترین کام کردیا کہ جان کر لڑکیاں کبھی بھی انجان مردوں پر بھروسہ نہ کریں

سعودی شہری کی انٹرنیٹ کے ذریعے نوعمر لڑکی سے دوستی اور پھر پہلی ملاقات میں ہی ...
سعودی شہری کی انٹرنیٹ کے ذریعے نوعمر لڑکی سے دوستی اور پھر پہلی ملاقات میں ہی ایسا شرمناک ترین کام کردیا کہ جان کر لڑکیاں کبھی بھی انجان مردوں پر بھروسہ نہ کریں

  


ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) انٹرنیٹ کے عام استعمال نے انسانی روابط اور میل جول میں اضافہ تو کیا ہے لیکن نادان افراد اور خصوصاً نو عمر لڑکیوں کے لئے یہ ایجاد بہت بڑا خطرہ بھی بن چکی ہے۔ سعودی عرب میں سوشل میڈیا کے ذریعے اجنبی شخص سے دوستی کرنے والی ایک نوعمر لڑکی بھی انٹرنیٹ پر ہونے والی دوستیوں کی بھینٹ چڑھ گئی اور ناصرف عزت لٹوا بیٹھی بلکہ جان بھی بال بال بچی۔

نیوز سائٹ ایمریٹس 247 نے مقامی اخبار صدا کے حوالے سے بتایا ہے کہ 14 سالہ لڑکی نے سوشل میڈیا پر ایک اجنبی سے دوستی کی پینگیں بڑھا لیں، جس کی عمر 30 سال سے بھی زائد تھی۔ دونوں کے درمیان پہلی ملاقات ہوئی تو یہ شخص لڑکی کو اپنی گاڑی میں بٹھا کر جدہ کے ساحلی علاقے کی سیر کرواتا رہا۔ کچھ دیر سیر کروانے کے بعد یہ اجنبی شخص لڑکی کو اپنے گھر لے گیا اور اس کی عصمت دری کر ڈالی۔

سعودی پولیس کا چھاپہ، 15 غیر ملکی خواتین گرفتار، انہیں کہاں اور کیوں رکھا گیا تھا؟ ایسا انکشاف کہ ان کا بچنا مشکل ہوگیا

میڈیا رپورٹ کے مطابق نوعمر لڑکی کے ساتھ متعدد بار زیادتی کی گئی جس کے نتیجے میں اس کی حالت غیر ہوگئی۔ بدقماش شخص لڑکی کی حالت بگڑنے پر اسے جدہ کے ساحل پر پھینک کر فرار ہوگیا۔ لڑکی نے حواس بحال ہونے پر قریب سے گزرنے والی ایک گاڑی کو اشارہ کیا، جس کے ڈرائیور نے اس کی حالت دیکھ کر پولیس کو اطلاع کردی۔ مقامی میڈیا کے مطابق پولیس جنسی درندے کو گرفتار کرچکی ہے اور اس کیس کی مزید تفتیش جاری ہے۔

مزید : عرب دنیا


loading...