موٹیویشن اکیڈمی اور بحریہ یونیورسٹی کے اشتراک سے طلبہ کیلئے ورکشاپ کا انعقاد

موٹیویشن اکیڈمی اور بحریہ یونیورسٹی کے اشتراک سے طلبہ کیلئے ورکشاپ کا ...

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

موٹیویشن اکیڈمی اور بحریہ یونیورسٹی لاہورکیمپس کے اشتراک سے نوجوان طلبہ کے لئے ورکشاپ منعقد کی گئی جس میں معروف اسپیکر قاسم علی شاہ نے خصوصی شرکت کی۔ مہمان خصوصی بحریہ یونیورسٹی لاہور کیمپس کے ڈپٹی ڈائریکٹر فیصل شبیر(کمانڈر ریٹائرڈ) تھے۔ معروف سپیکر قاسم علی شاہ ، ندیم چودھری ، زویا اسحاق اور شاواز بلوچ نے تقاریر کیں۔

اکیڈمی کے بانی محمد عبید اقبال نے’’ روزنامہ پاکستان‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس نوعیت کا یہ چوتھا پروگرام تھا۔اس سے پہلے معروف سپیکرزتنزیلہ خان‘سمیعہ سلیم‘گل افشاں طارق اور عمار ہ خالدان پروگراموں میں شرکت کرچکی ہیں۔محمد عبید اقبال نے کہا کہ منعقد ہونے والی ورکشاپ کا مقصد نوجوان طلبہ کو زندگی میں مثبت رویہ اپنانے‘مشکل حالات و پریشانی کا سامنا کرنے اور معاشرے میں مثبت کردار ادا کرنے پر زور دیا گیا۔ میں سمجھتا ہوں کہ وقت کے تغیرمیں کبھی بھی کسی ملک یا قوم کی حالت ایک سی نہیں رہتی۔ اگر کوئی ریاست تاریکی کے اندھیروں میں غرق ہوچکی ہوتی ہے تو وقت کی تبدیلی ہی اس میں ایک روشن کرن ثابت ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کے مستقبل کے بارے میں سوچنا اور اس کی بہتری کے لیے اقدامات کرنا ضروری ہے کیونکہ نوجوان ہمارے مستقبل کا سرمایہ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ موٹیویشن دوطرح کی ہوتی ہے ایک ہے بیرونی اور ایک اندرونی۔ اندرونی موٹیویشن کا مطلب ہے آپ کے اندر کوئی ایسی طلب ہو جو آپ کو چلائے اور بیرونی موٹیویشن کا مطلب ہے کہ باہر سے کوئی چیز جیسے لیکچر ، ٹرینرر،استاد،کتابیں یا کوئی رول ماڈل جو آپ کو باہر سے موٹیویٹ کرے۔قدرت کے سارے نظام میں آپ دیکھیں تو قدرت بھی بیرونی موٹیویشن پر چلتی ہے جیسے نبی پیغمبرؐ، بیرونی موٹیویشن میں ایک مقام ایسا آتا ہے جب وہ اندرونی موٹیویشن بن جاتی ہے اگر یہ اندر کی موٹیویشن نہ بنے تو پھر بیرونی موٹیویشن والے ذرائع بھی پیچھے رہ جاتے ہیں اندرونی موٹیویشن تب پیدا ہوتی ہے جب کوئی مقصد ہو۔ ان لوگوں کی بیرونی موٹیویشن جلدی اندرونی موٹیویشن میں بدل جا تی ہے جن کے پاس کوئی مقصد ہوتا ہے آپ زندگی میں مقصد لے آئیں آپ کے اندر موٹیویشن آ جائے گی۔ بہت سارے لوگ ایسے ہیں جو لیکچر سن سن کر خود سکالر بن جاتے ہیں مگر ان کے پاس اندرونی موٹیویشن نہیں ہوتی ان کے پاس ڈیٹاہوتا ہے ، معلومات ہوتی ہیں ، کتابیں ہوتی ہیں لیکن کامیابی نہیں ہوتی، سیلف ہیلپ کا ایک لیکچر کافی ہوتا ہے ، موٹیویشن کی ایک بھی کتاب کافی ہوتی ہے مگر شرط یہ ہے کہ آپ عمل کرنا شروع کر دیں۔ اگر آپ کی زندگی میں کوئی مقصد ہے تو پھر فور ا اپنی چیزوں کو ٹیسٹ کریں ان کو پکڑیں اور ان پر عمل کرنا شروع کر دیں پھر بیرونی موٹیویشن اور اندرونی موٹیویشن میں بدل جائے گی۔اگر مقصد کے بغیر بیرونی موٹیویشن لیتے رہیں گے تو پھر ایک وقت آئیگا کہ ان لیکچرز کا اثر بھی ختم ہو جائے گا اور آپ بد ظن ہو جائیں گے آپ بد ظن اس لیے ہو جائیں گے کہ آپ کہیں گے میں تو وہیں کا وہیں ہوں۔ موٹیویشن کا مطلب پیٹرول ڈلوانے کے بعد منزل کی طرف چلنا۔دنیا کی بڑی تحریکیں دیکھیں اگر ان میں موٹیویشن نہ ہوتی تو کبھی بھی نتائج نہیں ملنے تھے مثا ل کے طور پر نیلسن مینڈلا کے اندر موٹیویشن نہ ہوتی تو کبھی بھی جنوبی افریقہ میں انقلاب نہ آتا۔حضرت واصف علی واصف فرماتے ہیں "جس کو فیض ملتا ہے پھر وہ ٹکتا نہیں ہے آپ نے فرمایا ایک کو حضرت داتا گنج بخش کے مزار سے فیض ملا وہ اجمیر چلا گیا پھر وہ واپس نہیں آیا اس نے پورے اجمیر کو مسلمان کر دیا۔ اس کا مطلب ہے کہ آپ کے پاس کوئی چیز آئی اور آپ نے اس پر عمل کیا اور کوئی نتیجہ اخذ کیا۔

کامیاب زندگی کے لئے خواب ، فیصلے ، کارکردگی ، نظم و ضبط کی پابندی ، اور اللہ کی مدد ضروری ہے۔نوجوان اور نئی نسل کو بہتر آج دیں تاکہ وہ ہمارے آنے والے محفوظ اور مضبوط کل دے سکیں کیونکہ یہ نوجوان ہی ہماراآنے والا کل اور ہماری طاقت ہیں۔ ہمارے نوجوان ہمارا مستقبل اور ہماری امید ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مستقبل میں اکیڈمی کا مختلف ملکی وغیر ملکی فورمز پر منعقد کروانے کا پروگرام ہے تاکہ اکیڈمی کا مقصد زیادہ سے زیادہ نوجوان طلبہ تک پہنچ سکے اور ان کی زندگیوں میں مثبت اثرات مرتب ہوں۔

***

مزید : ایڈیشن 2