واپڈا،پی آئی اے ہاؤسنگ سکیم میں کرپشن،5ملزموں کا 14روزہ ریمانڈ

واپڈا،پی آئی اے ہاؤسنگ سکیم میں کرپشن،5ملزموں کا 14روزہ ریمانڈ

ملتان (نمائندہ خصوصی، خبرنگار خصوصی)نیب ملتان بیورو نے واپڈا ٹاؤن سکینڈل میں زونل چیئرمین پاکستان ہائیڈرو ورکرز یونین ممبران مینجمنٹ کمیٹی اورپرچیز کمیٹی چوہدری خالد ،پراپرٹی ریونیو کے محمد طلحہ بیگ ، عبدالرزاق کاشف کواحتساب عدالت ملتان میں پیش کرکے 14روزہ ریمانڈ(بقیہ نمبر61صفحہ12پر )

حاصل کرلیا۔ جبکہ پی آئی اے ہاؤسنگ سکیم سیکنڈل میں ملوث ایک ملزم کاریمانڈ حاصل کرلیا۔ نیب ترجمان کے مطابق چوہدری محمد خالد واپڈا ایمپلائزکو اپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی کی مینجمنٹ کمیٹی کا ممبر ہونے کے ساتھ لینڈ پرچیز کمیٹی کا ممبر بھی تھا۔ ملزم نے 2015میں29اگست 16نومبر اور30دسمبر کوسوسائٹی کو1ارب 75کروڑ 20لاکھ کا نقصان پہنچا سیکنڈل کے مرکزی کردارسعید خان نے دوران تفتیش انکشاف کیاکہ اس نے غیر قانونی اقدامات کی منظوری کیلئے مینجمنٹ کمیٹی اور پرچیز کمیٹی کو کمیشن اورکک بیک دیا چوہدری خالد کو اس ضمن میں ڈیرہ کروڑ روپے کمرشل اور رہائشی فائیلز دیں نیب ترجمان کے مطابق سلیمان صدیقی کے دوران حراست انکشاف کیاکہ اس نے محمد طلحہ بیگ اور عبدالرزاق کاشف کے ساتھ مل کرپراپرٹی ریو نیو کے نام کمپنی بنائی جس نے سوسائٹی سے 458کمرشل فائیلز حاصل کیں ۔ یہ فائیلز ایگریمنٹ پر حاصل کی گئیں اورمارکیٹ میں فروخت کردیں گئیں واپڈا ریکارڈ کے مطابق یہ اراضی تاحال واپڈا ٹاؤن کو ٹرانسفر نہیں ہوئی اسی طرح ملزمان نے دیگر کیسز سوسائٹی کو8کروڑ62لاکھ 40ہزار کانقصان پہنچایا ملزمان نے اراضی مالک مسعود اٹھنگل سے ایک سٹہ کیا 14کنال اراضی ڈیرہ کروڑ فی ایکڑ خریدی گئی اورسوسائٹی کے اکاؤنٹ سے سٹمپ ڈیوٹی کی مد میں2کروڑ 52لاکھ سی وی ٹی او ایڈوانس ٹیکس کی مد میں ادائیگی کردی گئی لیکن پراپرٹی سوسائٹی کے نام ٹرانسفر نہیں ہوئی اس حوالے سے ابراہیم پٹواری نے سعید خان پرتمام ملبہ ڈال دیا نیب ملتان نے ملزموں کے ریمانڈ کے حصول کے بعد تفتیش شروع کردی ۔ دریں اثناء پی آئی اے ہاؤسنگ سکیم سکینڈل میں جنرل سیکرٹری محمود یاسین زاہد کو حراست میں لیکر ریمانڈ حاصل کرلیاگیا ۔ ملزم عدالت عالیہ ملتان بنچ کی جانب ضمانت خارج ہونے کے بعد مفرور ہوگیا۔دریں اثنائجج احتساب عدالت ملتان نے واپڈاٹاؤن اورپی آئی اے ہاؤسنگ سکیم میں کرپشن کے مقدمات میں ملوث 5 ملزموں کا 14 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرتے ہوئے دوبارہ 24 مئی کوعدالت پیش کرنے کا حکم دیاہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر