الخدمت فاؤنڈیشن کے تحت ورلڈ تھیلیسیمیا ڈے کے حوالے سے آگاہی مہم

الخدمت فاؤنڈیشن کے تحت ورلڈ تھیلیسیمیا ڈے کے حوالے سے آگاہی مہم

لاہور(پ ر)الخدمت فاؤنڈیشن پاکستان کے تحت ملک بھر میں ورلڈ تھیلیسیمیا ڈے مناسبت سے ہفتہ آگاہی مہم منایا گیا۔اس حوالے سے ملک بھر کے مختلف تعلیمی اداروں میں سمینارز و آگاہی واکس کا اہتمام کیا گیا تھا جس میں طلبہ و طالبات، اساتذہ اور مختلف طبقہ شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ ان تقاریب میں مختلف ماہرین نے اس موذی مرض کی وجوہات، علاج اور تدارک پر روشنی ڈالی اس کے علاوہ طلبہ و طالبات نے بھی بڑی تعداد میں خون کے عطیات دیئے۔ اس سلسلے ایک تقریب پنجاب یونیورسٹی کے شعبہ ایگری کلچر میں منعقد کی گئی جس میں آگاہی واک و سیمینارکا اہتمام کیا گیاتھا تقریب سے خطاب کرتے ہوئے الخدمت فاؤنڈیشن کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر مشتاق احمد مانگٹ سے بتایا کہ روزا نہ پاکستان میں 14 سے 17لوگ تھیلسیمیا کے مرض میں مبتلا ہو جاتے ہیں جبکہ پاکستان میں سالانہ اوسطاََ7000 سے زائد بچے تھااس جان لیوا مرض کا شکار ہورہے ہیں۔

خاندانوں میں شادیاں اس بیماری کی بنیادی وجہ ہیں، شادی سے پہلے تھیلیسیمیا سے متعلق تمام ٹیسٹ کروالئے جائیں تو اس کو نسل در نسل بڑھنے سے روکا جاسکتا ہے۔الخدمت فاؤنڈیشن عوام الناس میں تھیلیسیمیا کے حوالے سے شعور اجاگر کرنے میں پیش پیش ہے۔اس حوالے سے یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی لاہور میں بھی تقریب کا انعقاد کیا گیا جس سے خطاب کرتے ہوئے الخدمت فاؤنڈیشن کے اسسٹنٹ سیکرٹری جنرل احمد جمیل راشد نے زور دیا کہ ہمیں اس دن یہ عہد کرنا ہے کہ ہم تھیلیسیمیا کے ٹیسٹ کرائیں گے، لوگوں کو اس کی آگاہی دیں گے اور ملک میں عطیہ خون کے رجحان کو بھی بڑھائیں گے۔ انھوں نے

مزید : میٹروپولیٹن 4