دیرینہ رنجش، تنازعات پر 5افراد قتل، 2طلبہ سمیت 6حادثات کی نذر

دیرینہ رنجش، تنازعات پر 5افراد قتل، 2طلبہ سمیت 6حادثات کی نذر

لڈن ‘ چوک اعظم ‘ صادق آباد ‘ بھکر ( نمائندگان ) دیرینہ رنجش سمیت مختلف تنازعات میں 5 افراد قتل کردئیے گئے ۔ اس سلسلے میں لڈن سے نامہ نگار کے مطابق نواحی علاقہ جوئیہ ہوٹلکے قریب تھانہ لڈن کی حدود میں دو گروپس کے درمیان راستہ کے تنازعہ پر جھگڑا شروع ہوگیا جس پر محمد عمران دولتانہ ،شوکت دولتانہ اور محمد یاور ،محمد سجاد ،محمد عباس،محمد افضل حاکم خان وغیر ہ کے درمیان ہاتھا پائی شروع ہوگئی اور بات فائرنگ تک جا پہنچی اور اچانک فائرنگ شروع ہوگئی جسکی زد میں آکر شوکت دولتانہ کی والدہ موقع پر جانبحق ہوگئی جبکہ شوکت اور عمران دونوں بھائی بھی زخمی ہوگئے جبکہ دوسرے گروپ کے سجاد کی ناک کی ہڈی ٹوٹ گئی اور آزاد سمیت و ہ دونوں بھی زخمی ہوگئے ۔اطلاع ملتے ہی پولیس تھانہ لڈن موقع پر پہنچ گئی جنہوں نے مقتولہ اور زخمیوں کو رورل ہیلتھ سنٹر لڈن منتقل کردیا جبکہ حاکم ،سجاد ،محمد یار ،افضل وغیرہ کو گرفتار کرلیا ،گرفتار ہونیوالے افراد کا کہنا ہے کہ زمین انکی ذاتی ہے اور وہ اس میں ہل چلا رہے تھے کہ شوکت دولتانہ گاڑی پر آیا اور لڑائی شروع کردی اور اچانک اپنی گاڑی سے رپیٹر نکالا اور فائرنگ کردی جسکی زد میں آکر انکی والدہ کو فائر لگا اور اسکے بعد دوسرا فائر انکے بھائی کو لگا لیکن وہ واقعہ کو الٹا رخ دیا جا رہا ہے اور انہیں پھنسانے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔موقع پر موجود عینی شاہدین کا بھی یہی کہنا ہے کہ مبینہ طور پر شوکت دولتانہ نے خود فائرنگ کی جس سے اسکی والدہ اور بھائی زد میں آگئے جبکہ پولیس کی تفتیش ابھی جاری ہے ۔ چوک اعظم سے نامہ نگار کے مطابق امام با رگاہ والی گلی میں کا روباری مراکز کی حفاظت پر ما مور چوکیدار کو نا معلوم شخص نے سر میں فا ئر مار کر قتل کر دیا صبح واردات کا علم ہو نے پر اہل علاقہ جا ئے وقوعہ پر جمع ہو گئے مقتول چو کیدار سلیم بلوچ ولد محمد رمضان چک نمبر343/TDAتحصیل چو بارہ ضلع لیہ کا رہا ئشی تھا اور 9ہزار روپے ما ہانہ پر چو کیداری کرتا تھا پو لیس نے لاش پو سٹ ما رٹم کروا کر لاش کو ورثاء کے حوالے کر دیا مقتول کی جیب سے 2مو با ئل کا غذات اور نقد رقم 9ہزار 70 رو پے بر آمد ہو ئے پو لیس کے مطا بق واقعہ پرانی دشمنی کا شا خسانہ ہو سکتا ہے شک کی بنا پر ساتھ والے بزرگ چو کیدار کو شا مل تفتیش کر لیا ہے مقتول کے بھا ئی کا کہنا تھا کہ دو روز قبل ما رکیٹ میں دوکان کو لو ٹنے کی غرض سے آئے ہو ئے تھے مزاحمت پر جان سے ما رنے کی دھمکی دے کر فرار ہو گئے اس بات کو مقا می تھا نہ کی پو لیس کو آگاہ نہیں کیا گیا جس کے عین دو دن بعد چو کیدار سلیم بلو چ کو قتل کر دیا گیا مقتول کی عمر22سے 24سال کے درمیان ہے مقتول کا تعلق انتہا ئی غریب خاندان سے تھا جس کے کفن دفن کا انتظام متعلقہ ما رکیٹ کے لو گو ں نے اور ما رکیٹ کے لو گوں نے مقتول کے ورثا کی ما لی امد بھی کی مقتول کا نماز جنا زہ 5;30بجے چک نمبر343ٹی ڈی اے میں ادا کیا گیا۔ صادق آباد سے تحصیل رپورٹر کے مطابق تھانہ احمدپورلمہ حدود کچہ بھٹہ کے مقام پر ملک اور بھٹہ برادری کے درمیان کبوتر بازی پر تصادم ہو گیا جس میں ملک قبیلہ کے عالم نامی نوجوان شخص قتل ہو گیا مقتول کی لاش RHC احمدپورلمہ منتقل کر دی گئی اور تھانہ احمدپورلمہ میں پولیس نے مقدمہ درج کر کے تفتیش کا آ غاز کر دیا ۔ بھکر سے نامہ نگار کے مطابق بھکر کے نواحی علاقہ ودھے والی کے رہائشی حمزہ نے عطا محمد کی بیٹی کے ساتھ پسند کی شادی کی تھی اور پھر علاقہ چھوڑ کرچلا گیا اور جب واپس آیا تو عطا محمد وغیرہ نے جاتے ہوئے اسے پکارا تو اس نے اپنے سسر عطا محمد اور سالوں پر فائرنگ کردی جس کے نتیجہ میں عطا محمدموقع پر ہی دم توڑ گیا جبکہ اس کے دونوں بیٹے شدید زخمی ہو گئے جنہیں ریسکیو 1122 نے ہسپتال منتقل کردیا لیکن زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے زخمی مطیع اللہ بھی جاں بحق ہو گیا جبکہ زخمی جہانگیر کی حالت تشویش ناک ہے پولیس نے موقع پر پہنچ کر علاقہ کی ناکہ بندی کرکے ملزم کی تلاش شروع کردی ہے ۔وہاڑی‘ گڑھا موڑ ‘ کبیروالا ‘ لودھراں ‘ حاصل پور ( نمائندگان ) حادثات و واقعات میں 2 طلبہ سمیت 6 افراد جاں بحق ‘ گھریلو جھگڑے پرنوجوان نے خودکشی کرلی ‘ اس سلسلے میں وہاڑی سے بیورو رپورٹ کے مطابق تیز رفتار بس نے سکول سے چھٹی کے بعد موٹر سائیکل پر سوار ہو کر گھر جانے والے دو طلباء کو کچل دیا ، بعدازاں بس بے قا بو ہو کر اُلٹ گئی بس میں سوار7مسافر زخمی ہو گئے ، پرائیویٹ کمپنی کی تیز رفتار بس جو کہ ملتان سے وہاڑی کی طرف آرہی تھی کہ گورنمنٹ ہائی سکول چک نمبر89ڈبلیوبی کے طالبعلم 15سالہ تبریز ولد محمد رفیق اور 15سالہ مجاہد ولد شہباز چٹھی کے بعد موٹر سائیکل پرسوار ہو کر گھرجا رہے تھے کہ بس کی زد میں آکر کچلے گئے تیز رفتاری کے با عث ڈرائیور بس پر قابو نہ رکھ سکا جس کے نتیجہ میں بس بھی اُلٹ گئی بس میں سوار مسافروں میں سے نصیراں بی بی ، مقبولا ں بی بی ، بشیراں بی بی ، محمد عمیر ، محمد نبیل ، محمد جا وید ، محمد عثمان زخمی ہو گئے جن میں دو زخمیوں کی حالت یشو یشناک ہے حادثہ کی اطلا ع ملتے ہی ریسکیو1122اور مقامی لو گو ں نے زخمیوں کو بس سے نکال کرطبی امداد کے بعد ڈی ایچ کیو شفٹ کردیا جبکہ جاں بحق طالب علموں کی نعشیں لواحقین اپنے گھروں کو لے کرچلے گئے۔ دریں اثناء ریسکیوذرائع کے مطابق نواحی گاؤں28پیراں والا میں نور محمد کا جو اں سالہ بیٹا محمد عمر جو کہ راج گیر کا کام کرتا تھا کسی کے گھر کی 40فٹ اونچی پانی والی ٹینکی تعمیر کر رہا تھا کہ دوران کام اچانک اسکا پا ؤ ں پھسل گیا تو نیچے آگرا جس پرریسکیو1122کو اطلاع دی تو ریسکیو1122ٹیم نے شدید زخمی کو ہسپتال شفٹ کیا مگر زخموں کی تاب نہ لا تے ہو ئے جا ں بحق ہو گیا ۔ گڑھا موڑ سے سپیشل رپورٹر کے مطابق ریت کے تودے تلے دب کر مزدور جاں بحق،تفصیل کے مطابق چک نمبر184 ڈبلیو بی غربی کا رہائشی ارشاد ولد گاہنہ گڑھے سے ریت نکال رہا تھا کہ اچانک اس کے اوپر ریت کا بھاری تودہ گر جس کی وجہ دم گھٹ کر جاں بحق ہو گیا پولیس تھانہ مترو نے کاروائی شروع کر دی ہے۔ کبیروالا سے نامہ نگار کے مطابق گزشتہ شام نواحی بستی حسین آباد کا رہا ئشی محمد صفدرجو ئیہ اپنے مکان کی چھت ڈلوا نے میں مصروف تھا جب کہ زیر تعمیر چھت کے نیچے اسکی تیرہ سالہ بیٹی ما ریہ صفدر اور اہلیہ نسرین بی بی شام کا کھانا بنا نے میں مصروف تھیں کہ اچانک زور دار دھما کے سے پختہ چھت ان پر آن گری ، بھا ری بھر چھت کا ملبہ گر نے سے ماریہ صفدر زخموں کی تاب نہ لا تے موقع پر ہی چل بسی جب کہ اسکی والدہ نسرین بی بی کو شدید زخمی حالت میں تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال منتقل کر دیا گیا جہاں اسکی حالت خطے سے با ہر بیان کی جا تی ہے۔ لودھراں سے نمائندہ پاکستان کے مطابق مو ٹر سائیکل رکشہ سے ٹکرا نے سے ایک شخص جاں بحق بتا یا گیا ہے کہ ایس ایچ او تھانہ دھنوٹ سید اختر حسین شاہ کے بھائی سید خادم علی شاہ اپنے بیٹے کے ہمراہ بہاولپور سے آرہے تھے کہ اچانک چھپ موڑ پر موٹر سائیکل ،رکشہ سے ٹکرا گیا جس کے نتیجے میں خادم علی شاہ شدید زخمی ہوگئے جنہوں 1122 نے فوری طور بہاولپوروکٹوریہ ہسپتال پہنچایاجہاں وہ زخمیوں کی تاب نہ لاتے ہوئے انتقال کرگئے جن کی نماز جنازہ آج صبح 9بجے 32پل ٹھٹھ صادق آباد میں ادا کی جائے گی۔ دریں اثناء موضع ٹھٹھی سمیجہ کی رہائشی حنیفاں مائی اپنے بھائی صدیق کے ساتھ موٹر سائیکل پر سوار ہوکر لودھراں آرہی تھی کہ پرمٹ خانیوال بائی پاس کے درمیان ریلوئے پھاٹک کے قریب تیز رفتار ٹرالرکی زد میں آگئی جس سے حنیفاں مائی موقع پر ہی جاں بحق ہوگئی جبکہ اس کا بھائی محمد صدیق شدید زخمی ہوگیا جسے طبی امداد کے لیے ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے ۔ حاصل پور سے نامہ نگار کے مطابق غریب محلہ مہتاب چوک حاصل پور کے رہائشی 18 سالہ نوجوان محمد ناصر نے گھر میں لڑائی جھگڑا ہونے پر پسٹل سے گولی مارکر خود کشی کر لی محمد ناصر کو شدید زخمی حالت میں 1122 ریسیکو عملہ نے طبی امداد کے لیئے سول ہسپتال پہنچا دیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔ پولیس تفتیش کرر ہی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر