سائنسدانوں نے چوہوں کے تولیدی اعضاء نکال کر گردن پر لگادئیے

سائنسدانوں نے چوہوں کے تولیدی اعضاء نکال کر گردن پر لگادئیے

ٹوکیو (نیوز ڈیسک)سائنسدانوں نے ایک چوہے کی گردن کاٹ کر دوسرے چوہے کے دھڑ پر لگانے کا کامیاب تجربہ کیا تو دنیا حیران رہ گئی، لیکن اب اس سے بھی زیادہ حیرت انگیز کامیاب تجربہ کرلیا گیا ہے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق جاپانی سائنسدانوں نے ایک چوہے کے تولیدی اعضاء کاٹ کر دوسرے چوہے کی گردن پر ٹرانسپلانٹ کردئیے ہیں۔ یہ تجربہ کرنے والے سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ان کی تحقیق کینسر کے باعث بانجھ پن کے خطرے سے دوچار مردوں کے لئے بے پناہ مددگار ثابت ہوگی۔سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اس تجربے سے انہوں نے ثابت کردیا ہے کہ تولیدی اعضاء کو کاٹ کر جسم کے کسی اور حصے پر ٹرانسپلانٹ کرنا نسبتاً کم پیچیدہ عمل ہے جس کی کامیابی کے امکانات توقع سے زیادہ بہتر ثابت ہوئے ہیں۔ ٹوکیو میڈیکل یونیورسٹی اور آئی چی میڈیکل یونیورسٹی کے سائنسدانوں کی اس مشترکہ تحقیق کا مقصد یہ پتہ چلانا تھا کہ ٹرانسپلانٹ کے بعد تولیدی اعضاء کس طرح زندہ رہتے ہیں اور اپنا کام جاری رکھتے ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4