پنجاب ہائی وے انجینئرز نے افسروں کی ملی بھگت سے قومی خزانے کو اربوں کا ’’ٹیکہ‘‘لگا دیا

پنجاب ہائی وے انجینئرز نے افسروں کی ملی بھگت سے قومی خزانے کو اربوں کا ...

لاہور (ارشد محمود گھمن/سپیشل رپورٹر)پنجاب ہا ئی وے مکینکل ورکشاپ کا سب انجینئر رانا مشتاق اور پلانٹ سب ڈویڑن لاہورکے سب انجینئر سید عمران اقبال کی جانب سے سابق چیف انجینئرنارتھ اور ایس ای ہائی وے سرکل لاہور اورمن پسند ٹھیکیداروں سے مبینہ ملی بھگت کرکے چھا نگا ما نگا، سفاری پارک رایؤنڈ روڈ سمیت متعدد منصوبوں میں قومی خزانے کو اربوں روپے کا ٹیکہ لگانے کا انکشاف ہوا ہے۔ جبکہ 15ارب رو پے کی لا گت سے شا ہدرہ ایکسپریس و ے اور او رینج ٹرین منصوبہ کی سپاٹ کرنے کی بابت مو جو دہ افسران نے پریمکس پلانٹ،ڈمپر،رولر،(پی ٹی آ ر) کی رئپیرنگ کی مد میں بھی پچاس لاکھ روپے خرد برد کر لئے واضح رہے کہ سب انجینئرزعمران اقبال اور رانا مشتاق نے اپنے عزیز واقارب کے نام سا بق چیف انجینئر نارتھ سرفراز بٹ سے سی کلاس فرمز رجسٹرڈ کروا کر جاری اربوں روپے کے ترقیاتی کاموں کے ٹینڈر ز میں ناقص میٹریل استعمال کرکے کروڑوں روپے قیمتی اثاثوں کے مالک بن گئے ہیں۔ذرائع کے مطابق پنجاب ہا ئی وے مکینکل ورکشاپ سرکل کے سب انجینئر رانا مشتاق اور سید عمراقبال سب انجینئرپلانٹ سب ڈویثرن سرکل لاہور کو حکومت کی طرف سے صوبائی دارالحکومت سمیت پنجاب بھر کے اضلاع میں اربوں روپے کے ترقیاتی کاموں میں کرپشن کرنے کی مد میں اپنے عزیز واقارب کے نام سی کلاس 5کروڑ روپے مالیت کی فرمز رجسٹرڈ کروا کر سابق چیف انجینئر نارتھ سرفراز بٹ ، ایس ای ہائی وے سرکل لاہور ،سابق ایکسیئن انوارالحق سے مبینہ ملی بھگت کرکے ترقیاتی کاموں کے ٹینڈرزجاری کروائے۔بعدازاں ان اربوں روپے کے منصوبوں کو کرپشن کی نظر کرکے قومی خزانے کو اربوں کا نقصان پہنچایا ہے۔ذرائع نے بتایا ہے کہ رانا مشتاق اور سید عمران اقبال سب ڈو یثر ن سرکل لاہور کی مبینہ کرپشن کے چرچے پائے جاتے ہیں۔ذرائع نے بتایا کہ یہ مذکورہ سب انجینئرز اپنے آپ کو شا ہد نجم ایس ای میکنیکل ہائی وے سرکل لاہور کا کارخاص بتاتے ہیں اور کہتے ہیں کہ ان افسران کی وجہ سے کروڑوں روپے کی کی جانے والی کرپشن کے متعلق آج تک محکمانہ دی جانے والی درخواستوں پر کارروائی نہیں ہوسکی جس کی وجہ سے یہ دونوں افسران جاری ترقیاتی کاموں میں ناقص میٹریل کا استعمال کرکے اور چند منصوبوں کو کاغذی کارروائی کرکے پورا کردیتے ہیں اور قومی خزانے سے کروڑوں روپے خوردبرد کرکے قیمتی اثاثوں ،گاڑیوں ،بنگلے ،پلاٹوں اور بینک اکاؤنٹس کے مالک بن گئے ہیں۔ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ رانا مشتاق سب انجینئر نے گزشتہ سال اپنے بھائی کے نام پر 5کروڑ روپے مالیت کی سی کلاس پاور اینڈ ڈور انجینئرفرم سا بق چیف انجینئر نارتھ سرفراز بٹ کی پشت پناہی حاصل ہونے پر رجسٹرڈ کروائی جس پر کروڑوں روپے مالیت کے ٹینڈر کروا کر قوامی خزانے کو نقصان پہنچایا۔ علاوہ ازیں 15ارب روپے کی لاگت ایکسپر یس وے شا ہدرہ راوی پل سے لیکر کا لا شا ہ کا کو تعمیر ہونے والے منصوبہ اور اوریج ٹرین منصوبہ کی سپا ٹ کیلئے بھی مشینری کی رئپرنگ کی مد میں بھی ایکسین اما نت علی اور ایس ای شا ہد نجم کی مبینہ ملی بھگت سے پچا س لا کھ روپے قو می خزانہ سے نکوا لئے ہیں یاد رہے ذرائع کے مطابق مو جودہ ایس ای شاہد نجم اورایکسین اما نت کو میٹرو ٹرین ملتان کے منصو بہ آڈٹ پیرہ800 میں ہو نے والی کر پشن بے ضابطگیوں کی وجہ سے ٹرانسفر کیا گیا تھا اس بابت چیف انجینئرنا رتھ کا کہنا ہے کے اس منصوبہ کو خادم اعلی کے ویثرن کے مطابق مکمل کیا جائے گا اور کر پٹ ملازمیں کے خلاف کارروائی کی جائے گی ایکسین اما نت کا کہنا ہے کے میں خا دم اعلی کا خا ص آدمی ہوں اسی وجہ سے میری ایما نداری کو دیکھ کر اتنی بڑی ذمہ داری دی گئی ہے۔

مزید : صفحہ اول