ڈی ایچ اے سٹی سکینڈل، نیب نے ملزم مراد ارشد کو گرفتار کر لیا

ڈی ایچ اے سٹی سکینڈل، نیب نے ملزم مراد ارشد کو گرفتار کر لیا

لاہور(خبرنگار) نیب لاہورنے ڈی ایچ اے سٹی لاہور سکینڈل میں ڈائریکٹر ڈی ایچ اے سٹی محمد مراد ارشد کو ماڈل ٹاؤن لاہور سے گرفتار کر لیا ہے۔ ملزم نیب کی زیر حراست حماد ارشد کا حقیقی بھائی ہونے کے علاوہ ڈی ایچ اے اور گلوبیکو کمپنی کے درمیان ہونے والے معاہدے کے دوران گلوبیکوکمپنی میں بطور ڈائریکٹر تعینات تھا۔ ملزم کے دستخط شدہ معاہدے کے تحت ڈی ایچ اے کا نام استعمال کرتے ہوئے لگ بھگ 10500 افراد سے پلاٹس کی مد میں درخواستیں وصول کی گئیں۔ نیب کے ڈی جی کے مطابق ملزمان نے متاثرین سے پلاٹس کی منتقلی کے لئے مجموعی طور پر 15.6 ارب روپے وصول کر لئے ہیں۔ ملزم محمد مراد ارشد کو احتساب عدالت کے روبرو پیش کیا جائے گا۔ نیب لاہور کی جانب سے کیس میں بامقصد پیش رفت کے لئے مزید گرفتاریاں متوقع ہیں۔ اسی کیس میں شریک ملزمان کامران کیانی اور طارق صدیق کو عدالت مفرور قرار دے چکی ہے اور ملزمان کی انٹرپول کے ذریعے گرفتاری کے لئے نیب کی جانب سے وزارت داخلہ کو مراسلہ ارسال کیا جا چکا ہے جو متعلقہ وزارت میں زیر التوا ہے۔

مزید : علاقائی