اے ڈی خواجہ کی بطور آئی جی سندھ تقرری پر حکم امتناع برقرار

اے ڈی خواجہ کی بطور آئی جی سندھ تقرری پر حکم امتناع برقرار

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائی کورٹ نے اے ڈی خواجہ کی بطور آئی جی سندھ تقرری پر حکم امتناعی برقرار رکھتے ہوئے مزید کارروائی درخواست گزار کے وکیل فیصل صدیقی کی عدم حاضری کے باعث ملتوی کردی ہے۔درخواست پر مزید کارروائی آج(جمعرات) کو ہوگی۔بدھ کو جسٹس منیب اختر پر مشتمل دو رکنی بینچ کی عدالت میں احکامات کے باوجود آئی جی سندھ کو عہدے سے برطرف کرنے پر دائر توہین عدالت کی درخواست کی سماعت ہوئی۔ عدالت میں ایڈووکیٹ جنرل سندھ ضمیر گھمرو پیش ہوئے تاہم عدالت میں درخواست گزار کے وکیل فیصل صدیقی پیش نہیں ہوسکے۔بعدازاں عدالت نے درخواست کی سماعت بغیر کسی کارروائی کے کل تک ملتوی کردی ۔واضح رہے کہ گذشتہ سماعت پر عدالت میں فیصل صدیقی نے دلائل دیتے ہوئے کہا تھاکہ ہم درخواست کرینگے کہ پورے معاملہ پر ایک جوڈیشل کمیشن تشکیل دیا جائے ،جو نہ صرف 2002 کے پولیس آرڑر پر اپنی رائے دیں بلکہ دیگر معاملات کو بھی دیکھے،جس پر جسٹس منیب اختر نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا تھا کہ آپ چاہتے ہے کہ اس طرح کا کمیشن بنایا جائے جس کی سفارشات ہمارے پاس آئے اور ہم حتمی آرڑر پاس کرے عدالت کا کہنا تھا کہ قانون سازی اور انتظامی احکامات میں فرق ہے ہائی کورٹ کے پاس دونوں میں احکامات جاری کرنے کا اختیار ہے۔یاد رہے کہ آئندہ سماعت پر فیصل صدیقی اپنے دلائل مکمل کرینگے جبکہ ایڈوکیٹ جنرل سندھ بھی درخواست پر اپنے دلائل دینگے۔

مزید : کراچی صفحہ اول