نوشہرہ ،قاضی میڈیکل کمپلیکس کو لیڈی ڈاکٹروں کیخلاف نازیبا زبان استعمال کرنے پر تالے

نوشہرہ ،قاضی میڈیکل کمپلیکس کو لیڈی ڈاکٹروں کیخلاف نازیبا زبان استعمال ...

نوشہرہ(بیورورپورٹ) قاضی میڈیکل کمپلیکس نوشہرہ کے ڈائریکٹر کا لیڈی ڈاکٹرز کو غلیظ گالیاں ونازیباالفاظ کی ادائیگی لیڈی ڈاکٹرز ، نرسز اور دائیوں کا احتجاج ہسپتال کے تمام شعبہ جات اور وارڈز سمیت اپریشن تھیٹر کو تالے لگ گئے ڈائریکٹر کے تبادلے تک کام چھوڑ احتجاج کی دھمکی لیڈی ڈاکٹروں کے احتجاج میں نوشہرہ کے عوام نے بھی ساتھ دے دیا قاضی میڈیکل کمپلیکس کے بورڈ آف گورنرز نے ڈائریکٹر کو شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے وضاحت طلب کردیا تفصیلات کے مطابق قاضی میڈیکل کمپلیکس نوشہرہ میں تعینات لیڈی ڈاکٹرز ڈاکٹر حمیدہ، ڈاکٹر سعدیہ اور ڈاکٹر شہزادی نیلم نے قاضی میڈیکل کمپلیکس کے ڈائریکٹر ڈاکٹر سراج خان سے اپریشن تھیٹر میں ضروری آلات جراحی کی ڈیمانڈ کی غرض سے وفد کی شکل میں ملاقات کی اور ان سے ڈیمانڈ کی کہ اپریشن تھیٹر میں اکسیجن جیسے بنیادی سہولت سمیت دیگر سہولیات نہ ہونے کے برابر ہے اس لئے قاضی میڈیکل کمپلیکس کے اپریشن تھیٹر سے سرجری کے مریض مستفید نہیں ہوسکتے لہذا اپریشن تھیڑ میں سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات اٹھائیں جائے جس پر ڈائریکٹر ڈاکٹر سراج خان سیخ پا ہوگئے اور وفد میں شامل تمام لیڈی ڈاکٹرز کو غلیظ گالیاں دینی شروع کردی اور ان کے منہ پر ان کو نازیباالفاظ ادا کئے جس پر لیڈی ڈاکٹرز، نرسز اور قاضی میڈیکل کمپلیکس کی دائیاں سراپااحتجاج بن گئی اور دو گھنٹوں تک تمام شعبوں جات کو بند کردیا جس پر نوشہرہ کے عوام نے بھی ڈاکٹر سراج کے ناروا روئیے کی مذمت کرتے ہوئے لیڈی ڈاکٹرز، نرسسز اور دائیوں کے احتجاج میں شامل ہوگئے مظاہرین نے ڈاکٹر سراج کے خلاف شدید نعرے بازی کی اور ڈاکٹر سراج کو قاضی میڈیکل کمپلیکس سے تبدیل کرنے کا مطالبہ کردیا اور ڈاکٹر سراج کی تبادلے تک احتجاج جاری رکھنے کابھی اعلان کیا ڈاکٹر سراج کا لیڈی ڈاکٹر کے ساتھ ناروا رویہ رکھنے پر قاضی میڈیکل کمپلیکس کے بورڈ آف گورنرز نے فوری طورپر ایکشن لیتے ہوئے ڈائریکٹر ڈاکٹر سراج خان کو شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے واقعے کی وضاحت طلب کی ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر