چکوال،لیپ ٹائپ تقسیم کرنیکی سکیم ابتداء میں ہی مشکلات سے دوچار

چکوال،لیپ ٹائپ تقسیم کرنیکی سکیم ابتداء میں ہی مشکلات سے دوچار

چکوال(ڈسٹرکٹ رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب کی طرف سے ذہین اور لائق بچوں کو لیپ ٹاپ دینے کی سکیم ابتداء میں ہی مشکلات سے دوچار ہوگئی۔ ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز چکوال کی طرف سے سوشل میڈیا پر جاری ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق جن طلباء وطالبات کے نمبر ایف ایس سی ، بی اے بی ایس سی او ربی ایس پروگرام میں70فیصد سے زائد ہیں ان کو لیپ ٹاپ تقسیم کیے جائیں گے جبکہ میٹرک کیلئے طریقہ کار میں نمبر90فیصد کر دیے گئے ہیں اور اس ضمن میں گیارہ مئی کو گورنمنٹ پوسٹ گریجویٹ کالج چکوال میں لیپ ٹاپ تقسیم کرنے کی تقریب بھی منعقد کی جا رہی ہے۔ اہل چکوال نے وزیراعلیٰ پنجاب سے استدعا کی ہے کہ اس پروگرام کے تحت تو ضلع چکوال کے دور دراز اور پسماندہ سکولوں کے میٹرک پاس بچے تو لیپ ٹاپ سے محروم رہ جائیں گے کیونکہ پچھلی دفعہ2015کی سکیم کے تحت میٹرک میں78فیصد حاصل کرنے والوں کو لیپ ٹاپ دیے گئے تھے۔ اہل چکوال کے مطابق اس سکیم اور موجودہ طریقہ کار میں تو میٹرک کا ضلع چکوال کا شازو نادر ہی ایکا دکا کوئی طالب علم یہ لیپ ٹاپ حاصل کر سکے گا اور یہ سارے لیپ ٹاپ تو بڑے شہروں اور بڑے سکولوں کے وہی بچے حاصل کر سکیں گے جنہوں نے بور ڈ اور یونیورسٹی میں نمایاں پوزیشنیں حاصل کی ہیں، اہل چکوال نے استدعا کی ہے کہ چکوال جیسے پسماندہ ضلع کیلئے میٹرک کیلئے لیپ ٹاپ حاصل کرنے کا میرٹ70فیصد نمبر مقرر کیا جائے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر