سٹاک مارکیٹ میں منداجاری  انڈیکس میں مزید171پوائنٹس کمی

    سٹاک مارکیٹ میں منداجاری  انڈیکس میں مزید171پوائنٹس کمی

  

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں مندی کا تسلسل جاری کاروباری ہفتے کے آخری روزجمعہ کوبھی اتارچڑھاﺅ کے بعد مندی رہی اور کے ایس ای100انڈیکس34800کی نفسیاتی حدسے بھی گرگیااور4سال کی کم ترین سطح پر آگیا،مندی کے نتیجے میںسرمایہ کاروں کے مزید17ارب10کروڑروپے سے زائدڈوب گئے ،کاروباری حجم گذشتہ روز کی نسبت49.69فیصدکم جبکہ65.62فیصد حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی۔جمعہ کوکاروبارکا آغاز ملے جلے رجحان سے ہواتاہم ملک کے اقتصادی ٹیم میں تبدیلیوں کے بعد نئے وفاقی بجٹ میں سخت اقدامات کے خدشات، آئی ایم ایف سے بیل آﺅٹ پیکیج کے لیے جاری مذاکرات میں روپے کی قدر مزید گھٹنے، ڈسکاﺅنٹ ریٹ میں مزید اضافے کے خدشات اور نئے مالی سال کے بجٹ میں700سے 750 ارب روپے کے اضافی ٹیکس عائد ہونے کی خبروں نے پاکستان اسٹاک ایکس چینج کو اپنی لپیٹ میں لیا، جس سے کے ایس ای100 انڈیکس دوران ٹریڈنگ34646پوائنٹس کی سطح پر دیکھاگیاتاہم غیرملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے منافع بخش سیکٹرکی نچلی سطح پر آئی ہوئی قیمتوں پرخریداری کی گئی ، جس کے نتیجے میں مارکیٹ میں ریکوری آئی اورکے ایس ای100انڈیکس کی34700کی حد بحال ہوگئی تاہم اتارچڑھاﺅ کا سلسلہ سارادن جاری رہا،مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس171.11پوائنٹس کمی سے34716.53 پوائنٹس پر بندہوا۔ماہرین اسٹاک ایکسچینج کے مطابق اقتصادی ٹیم میں حالیہ تبدیلیوں کے تناظر میں سرمایہ کاروں کو یہ خدشات لاحق ہوگئے ہیں کہ نئے وفاقی بجٹ میں کیپیٹل مارکیٹ کو کسی قسم کاکوئی ریلیف نہیں ملے گا، یہی منفی عوامل جمعرات کوبھی اسٹاک مارکیٹ کی نفسیات پر چھائے رہے اور مارکیٹ تنزلی سے دوچارہوئی۔ جب کہ ماہ رمضان المبارک کی آمد کے باعث بھی سرمایہ کاری کے بیشتر شعبوں نے مارکیٹ سے اپنے سرمائے کے انخلا کو ترجیح دی ۔جمعہ کومجموعی طور پر288کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا،جن میں سے77کمپنیوں کے حصص کے بھاو¿میں اضافہ،189کمپنیوں کے حصص کے بھاو¿ میں کمی جبکہ22کمپنیوں کے حصص کے بھاو¿ میں استحکام رہا۔سرمایہ کاری مالیت میں17ارب10کروڑ76لاکھ24ہزار613روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی،جس کے نتیجے میں سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر71کھرب26 ارب36 کروڑ58لاکھ72ہزار857روپے ہوگئی۔جمعہ کومجموعی طور پر3کروڑ92لاکھ86ہزار90شیئرزکاکاروبارہوا،جوجمعرات کی نسبت 3کروڑ88لاکھ13ہزار250شیئرزکم ہیں۔

سٹاک مارکیٹ

مزید :

صفحہ اول -