صوابی ، پیہور ہائی لیول کنال پر قائم بجلی گھر میں عوام کا آئینی حق ہے: عوامی حلقے 

صوابی ، پیہور ہائی لیول کنال پر قائم بجلی گھر میں عوام کا آئینی حق ہے: عوامی ...

  

صوابی ( بیورورپورٹ) ضلع صوابی کی سیاسی و مذہبی جماعتوں ، لیبر تنظیموں اور دیگر مختلف سماجی تنظیموں اور عوامی حلقوں نے وفاقی حکومت ، وفاقی وزیر پانی و بجلی اور سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے مطالبہ کیا ہے کہ گدون صنعتی بستی کے مقام پر پیہور ہائی لیول کنال پر قائم بجلی گھر سے پیدا ہونے والی آٹھارہ میگا واٹ بجلی ، گدون صنعتی بستی کے صنعتکاروں کی بجائے ضلع صوابی کو فراہم کی جائے کیونکہ یہ صنعتکاروں کا نہیں بلکہ صوابی کے غریب عوام کا قانونی اور آئینی حق ہے اس سلسلے میں جے یو آئی صوبہ خیبر پختونخوا کے نائب امیر مولانا عطاءالحق درویش ، ضلعی امیر صوابی مولانا فضل علی حقانی ، سینئر نائب امیر حاجی غفور خان جدون ، قومی وطن پارٹی کے چیر مین مسعود جبار ، پی پی پی تحصیل ٹوپی کے صدر ملک محمد نواز خان ، گدون لیبر فیڈریشن کے صدر نور محمد جدون ، مسلم لیگ ن کے تحصیل صوابی کے تر جمان محمد اقبال زیدہ وال ، ضلعی سیکرٹری اطلاعات جماعت اسلامی عبدالسلام ایڈوکیٹ ، ضلعی جنرل سیکرٹری اے این پی نوابزادہ اور دیگر نے ایک مشترکہ بیان میں واضح کر دیا ہے کہ ضلع صوابی اور خصوصاً تحصیل ٹوپی اور گدون اتمان کے عوام نے تر بیلہ ڈیم ، گدون انڈسٹریل اسٹیٹ ، جی آئی کے انسٹی ٹیوٹ ، غازی بھروتہ ہائیڈل پاﺅر اور دیگر منصوبوں کے لئے اونے پونے قیمتی اراضی حکومت کو فراہم کر دی ہے لیکن اس کے باوجود یہاں کے عوام کو بجلی کے مد میں کسی قسم کا ریلیف نہیں مل رہا ہے حالانکہ یہ ایک عام قانون ہے کہ جہاں بجلی کا پاﺅر ہاوس ہو وہاں اس علاقے کے عوام کو سب سے پہلے بجلی میسر ہو گا لیکن بد قسمتی سے صوابی میں پیدا ہونے والی بجلی سے یہاں کے عوام یکسر محروم ہے اب چونکہ گدو صنعتی بستی میں پیہور ہائی لیول کنال پر حکومت نے ایک اور پراجیکٹ قائم کیا ہے جو آٹھارہ میگا واٹ بجلی پیدا کر رہا ہے اور حکومت یہی بجلی سستے نرخوں پر گدون کے صنعتکاروں کو فراہم کر رہی ہے لیکن اس بجلی کا حق گدون کے امیر صنعتکاروں کا نہیں بلکہ ضلع صوابی کے غریب عوام کا حق ہے انہوں نے کہا کہ حکومت اس آٹھارہ میگا واٹ بجلی کو سستے نرخوں پر ضلع بھر کو فراہم کی جائے جس سے نہ صرف غریب صارفین پر بجلی کے بھاری بلز کے بوجھ کا خاتمہ ہو جائیگا بلکہ سال بھر لوڈ شیڈنگ سے بھی نجات ملے گا کیونکہ اس پراجیکٹ سے پیدا ہونے والی بجلی سے کسی قسم کا لوڈ شیڈنگ نہیں ہو رہا ہے لہٰذا حکومت فوری طور پر گدون پراجیکٹ کے آٹھارہ میگا واٹ بجلی کو ضلع بھر کے عوام کو فراہم کیا جائے اور یہ یہاں کے عوام کا آئینی اور قانونی حق بھی ہے#

مزید :

پشاورصفحہ آخر -