انڈیا ریڈ، پاکستان، اورنج چین پیلو اور کشمیر گرے زون قرار

انڈیا ریڈ، پاکستان، اورنج چین پیلو اور کشمیر گرے زون قرار

  

نیویارک (آئی این پی) عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے حوالے سے آبادی کے تناسب کے لحاظ سے متاثرہ ایشیائی ممالک کی صف بندی کی ہے جس میں اعداد و شمار پر مبنی ایک نقشہ بنایا جاتا ہے اور کیسز کی تعداد کے حساب سے ممالک کو کٹیگری میں رکھا جاتا ہے۔ موجودہ نقشے میں بھارت ریڈ زون، پاکستان اورینج اور چین یلو میں ہے۔ جموں و کشمیر کو گرے زون میں رکھا گیا ہے۔ریڈ زون کا مطلب ہے علاقے میں ایک لاکھ تک کورونا وائرس کے کیسز ہیں۔ اورینج زون کا مطلب ہے 10 ہزار تک کورونا کے مریض ہیں،ییلو کا مطلب ایک سے100 تک مریض ہو سکتے ہیں، گرین زون کا مطلب علاقہ محفوظ ہے جبکہ گرے زون کا مطلب علاقہ متنازع حیثیت کا حامل ہے۔ڈبلیو ایچ او کی گزشتہ ایک مہینے کی رپورٹ میں جموں و کشمیر کو 'گرے زون' میں رکھا گیا ہے جو عالمی سطح پر متنازعہ حیثیت کی علامت ہے۔تاہم ڈبلیو ایچ او کی جانب سے بنائے گئے نقشے میں پورے جموں و کشمیر کو ایک ساتھ رکھا گیا ہے اور پورے علاقہ کو 'گرے زون' قرار دیا گیا ہے۔ چند روز قبل انڈیا میٹرولوجیکل ڈپارٹمنٹ نے اپنے موسم کی صورتحال میں مظفرآباد، میرپور، گلگت اور بلتستان کو بھی شامل کر دیا۔ یہ علاقہ اس وقت پاکستان کے زیر انتظام ہے۔ گزشتہ شب دوردرشن اور آل انڈیا ریڈیو پر پاکستان زیر انتظام کشمیر کے علاقوں کی موسم کی صورتحال نشر کی گئی۔

کشمیر گرے زون

مزید :

صفحہ اول -