پارلیمنٹ کا اجلاس بلانے کا فیصلہ غلط شرکت نہیں کروں گا،فوادچوہدری

پارلیمنٹ کا اجلاس بلانے کا فیصلہ غلط شرکت نہیں کروں گا،فوادچوہدری

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ کا اجلاس بلانے کا فیصلہ درست نہیں، اجلاس میں شرکت نہیں کروں گا، ورچوئل سیشن کے ذریعے جدید پارلیمنٹ کا راستہ اختیار کرنا چاہئے، لیکن اپوزیشن کو نقصان ہو گا کہ وہ پرچے پھاڑ کر نہیں پھینک سکے گی، مسلم لیگ ن اپنی اہمیت بڑھانے کے لئے اجلاس بلانے کی ضد کر رہی ہے۔اتوار کے روز نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا ہے کہ موجودہ حالات میں پارلیمنٹ کا اجلاس بلانے کا فیصلہ درست نہیں ہے اس لئے میں سیشن میں حصہ نہیں لوں گا۔ سپیکر قومی اسمبلی کو ورچوئل سیشن منعقد کروانے کا مشورہ دیا تھا ہمیں ورچوئل سیشن کے ذریعے ماڈرن پارلیمنٹ کی طر ف جانا چاہئے تھا لیکن اس سے اپوزیشن جماعتوں کو نقصان ہو سکتا تھا کہ وہ پرچے پھاڑ کر نہیں پھینک سکتیں۔فواد چوہدری نے کہا کہ صوبوں کو اختیار دینے میں کسی قسم کا جھگڑا نہیں ہے لیکن یہ ایک الگ بحث ہے کہ صوبوں سے اختیارات نچلی سطح تک منتقل نہیں ہوئے۔ این ایف سی ایوارڈکا تعلق آئینی ترمیم سے نہیں ہے وفاقی حکومت کے اوپر قرضوں کا بہت زیادہ بوجھ ہے۔ این ایف سی ایوارڈ کے معاملے پر اسمبلی میں بحث ہونی چاہئے جبکہ صوبوں کو میگا پراجیکٹس، ڈیفنس اور قرضوں کی آدائیگی میں حصہ ڈالنا چاہئے۔

فوادچوہدری

مزید :

صفحہ اول -