ذوالفقار مرزاکوگورنرسندھ بنانے کی افواہیں ایک بارپھر زورپکڑ گئیں

ذوالفقار مرزاکوگورنرسندھ بنانے کی افواہیں ایک بارپھر زورپکڑ گئیں

  

پنگریو(این این آئی)سابق وزیرداخلہ سندھ اورگرینڈڈیموکریٹک الائنس کے مرکزی رہنما ڈاکٹرذوالفقارعلی مرزاکوگورنرسندھ بنائے جانے کی افواہیں ایک بارپھر زورپکڑ گئی ہیں اورسیاسی حلقوں کے علاوہ سوشل میڈیاپران کے گورنربننے کے حوالے سے بحث چھڑگئی ہے، موجودہ گورنرسندھ عمران اسماعیل کی جانب سے چندروزقبل دئیے جانے والے متنازعہ بیان کے بعدان کی تبدیلی کے مطالبات بھی سامنے آئے تھے جبکہ ان کی اب تک کی کارکردگی کے حوالے سے بھی بحث جاری ہے۔ اسی تناظر میں یہ افواہیں گشت کررہی ہیں کہ موجودہ گورنر سندھ کوہٹایاجارہا ہے اوران کی جگہ ڈاکٹرذوالفقارعلی مرزاکوگورنرسندھ بنایاجارہا ہے جوکہ سندھ کے وزیرداخلہ رہ چکے ہیں اوراس وقت سندھ کی حکمران جماعت پیپلزپارٹی کی مرکزی قیادت کے خلاف سخت موقف رکھتے ہیں اورصوبے میں پی پی پی مخالف جماعتوں میں بھی ان کا بڑانام ہے۔سیاسی حلقوں کے مطابق موجودہ گورنرسندھ عمران اسماعیل ایک طرف توصوبے کی حکمران جماعت پیپلزپارٹی کو ٹف ٹائم دینے میں ناکام رہے ہیں تودوسری طرف ان کے صوبے کی لسانی اکائیوں اورشہری ودیہی تفریق کے حوالے سے وقتا فوقتا سامنے آنے والے بیانات پی ٹی آئی کی حلیف سیاسی جماعتوں کیلئے بھی پریشانی کاباعث بنتے رہتے ہیں۔سیاسی حلقوں کے مطابق پی ٹی آِئی کے کچھ صوبائی رہنمابھی پیپلزپارٹی کو ٹف ٹائم دینے کیلئے ڈاکٹرذوالفقارعلی مرزاکوگورنرسندھ بنانے کے حق میں ہیں مگروہ آن دی ریکارڈ اس کا اظہارنہیں کررہے۔ ذرائع کے مطابق اندرون سندھ کے پی ٹی آئی ورکراورمقامی عہدیداربھی موجودہ گورنرسندھ کی کارکردگی سے خوش نہیں ہیں اوران کی بھی خواہش ہے کہ ڈاکٹرذوالفقارعلی مرزاجیسے کسی سخت گیرپی پی پی مخالف رہنما کو گورنرسندھ بنایاجائے تاکہ صوبے میں پی پی پی کاسیاسی طورپربہترطریقے سے مقابلہ کیاجاسکے۔

افواہیں

مزید :

صفحہ آخر -