کورونا لاک ڈاؤن، پنجاب میں دسمبر سے 28لاکھ بچوں کی پیدائش متوقع

  کورونا لاک ڈاؤن، پنجاب میں دسمبر سے 28لاکھ بچوں کی پیدائش متوقع

  

فیصل آباد (آئی این پی)کورونا لاک ڈاؤن کے باعث رواں سال پنجاب میں 28لاکھ نئے بچوں کی پیدائش متوقع ہے، جنوبی پنجاب کی آبادی میں سب سے زیادہ ہوشرباء اضافہ ہو گا، محکمہ صحت نے مناسب منصوبہ بندی نہ کی تو ہسپتالوں میں نئے پیدا ہو نیوالے بچوں کیلئے ادویات بیڈز کم پڑ جا ئیں گے۔9لاکھ سے زائد بچے غذائی کمی کاشکار ہو نے کے باعث عمر کے پہلے تین ماہ پورے کر نے میں مشکلات کا شکار رہیں گے۔ محکمہ بہبود آبادی کے ذرائع نے بتا یا کہ رواں سال کورونا لاک ڈاؤن کے باعث پنجاب بھر میں 28لاکھ بچوں کی پیدائش متوقع ہے۔ 9لاکھ سے زائد پیدا ہو نیوالے بچے غزائی کمی کا شکار ہو نے کی وجہ سے مختلف جسمانی معذوری کا شکار ہونے کے باعث اپنی عمر کے پہلے3ماہ پورے کر نے مشکل ہو نگے۔ ذرائع کے مطا بق جنوبی پنجاب بچوں کی شرع پیدائش میں سب سے آگے ہو گا۔ آبادی میں ہو شرباء اضافہ ہو نے کے ساتھ ساتھ اگر حکومت پنجاب محکمہ صحت نے اس سلسلہ میں مناسب منصوبہ بندی نہ کی تو صوبہ بھر کے ہسپتالوں میں نئے پیدا ہونے والے بچوں کیلئے ادویات اور بیڈز سمیت دیگر سہولیات کم پڑ جا ئیں گی جس کی وجہ سے شرع اموات میں زیادہ اضافہ ہو سکتا ہے۔

بچے پیدائش

مزید :

صفحہ آخر -