کے پی فوڈ اتھارٹی کی جعلی برانڈز اور جعلسازوں کیخلاف بڑی کارروائی،2گودام سیل

  کے پی فوڈ اتھارٹی کی جعلی برانڈز اور جعلسازوں کیخلاف بڑی کارروائی،2گودام ...

  

پشاور (سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا فوڈ اتھارٹی نے جعلی برانڈز کیخلاف عوامی شکایات پر کاروائی کرتے ہوئے کوہاٹ روڈ اور ہشتنگری میں دو گودام سیل کرکے متعلقہ پولیس سٹیشنز میں مزید کاروائی کیلئے مراسلہ جمع کردیا ہے۔ یہاں سے جاری ایک بیان میں ڈائریکٹر جنرل کے پی فوڈ اتھارٹی سہیل خان نے کہا ہے کہ فوڈ اتھارٹی کیساتھ تمام برانڈز اور اشیائے خوردونوش کے روزگار رجسٹرڈ ہیں اور فوڈ اتھارٹی علاقائی سطح پر بننے والی اشیائے خوردونوش کی ترویج اور ترسیل کی حوصلہ افزائی کرتی ہے اور اس کی رجسٹریشن اور بہتری میں تکنیکی معاونت بھی فراہم کرتی ہے لیکن قومی و بین الاقوامی برانڈز کی جعلی کاپی اور غیرمعیاری مشروبات کا کاروبار کرنا سنگین جرم ہے جسے کے پی فوڈ اتھارٹی تقریبا صوبے سے ختم کرچکی ہے۔ کریک ڈاؤن کی تفصیلات بتاتے ہوئے ڈائریکٹر آپریشنز ڈاکٹر عظمت وزیر کا کہنا تھا کہ ہمدرد انڈسٹری کی نشاندہی پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر فوڈ سیفٹی اسد علی اور رحم العزیز کی ٹیموں نے کوہاٹ روڈ پر واقع گودام پر چھاپہ مارا۔ جہاں ہمدرد برانڈ کے مشہور زمانہ مشروب کے نام پر جعلی مشروبات کی موجودگی کا انکشاف ہوا۔ گودام میں مشہور مشروب کے ریپرز اور پیکنگ کا تمام میٹیریل بھی موقع پر برآمد کیا گیا۔ ان کے مطابق گودام سے ہزاروں لیٹر غیر معیاری مشروبات کو قبضہ میں لیکر گودام کو سیل کردیا گیا جبکہ مالک کیخلاف متعلقہ تھانے میں مراسلہ جمع کرکے مزید تفتیش شروع کردی گئی ہے۔ ڈاکٹر عظمت وزیر نے مزید بتایا کہ عوامی شکایات سیل پر موصول ہونے والی اطلاعات پر کاروائی کرتے ہوئے مذکورہ ٹیموں نے ہشتنگری میں بھی جعلی مشروبات کے گودام پر چھاپہ مارا جہاں ملٹی نیشنل برانڈ کوک اور ڈیو کے نام جعلی مشروبات تیار کیجاتی تھیں۔ کوک برانڈ کی جعلی مشروبات کی پیکنگ پر گودام کو سیل اور مال کوضبط کرلیا گیا۔ ڈائریکٹر آپریشنز کے مطابق کے پی فوڈ سیفٹی ایکٹ میں مس برانڈنگ اور جعلسازی کے بڑے جرمانے اور سزائیں ہیں جس کے تحت مالکان کیخلاف سخت سے سخت قانونی کاروائی ہوگی

مزید :

پشاورصفحہ آخر -