ملک کے سب سے بڑے ماس ویکسینیشن سینٹر نے کام شروع کردیا 

ملک کے سب سے بڑے ماس ویکسینیشن سینٹر نے کام شروع کردیا 

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر) کرونا وبا کی روک تھام کے لئے سندھ میں پاکستان کے سب سے بڑے ماس ویکسینیشن سینٹر نے کام شروع کردیا ہے، ویکسینیشن سینٹر میں یومیہ 25 سے 30 ہزار افراد کو ویکسین لگائی جائے گی۔تفصیلات کے مطابق وزیر صحت سندھ ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے اس ویکسینیشن سینٹر کا افتتاح کیا، اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر صحت سندھ نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں ویکسین کی فوری دستیابی کی بنیاد پر زیادہ سے زیادہ لوگوں کی ویکسی نیشن کرے۔وزیر صحت سندھ ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے کہا کہ پاکستان کے سب سے بڑے اس ویکسینیشن سینٹر میں یومیہ 25 سے 30 ہزار افراد کو ویکسین لگائی جا سکے گی، سولہ مئی سے تمام افراد کے لئے ویکسینیشن شروع کی جائے گی، اب چالیس سال سے کم عمر کے افراد بھی ویکسین لگوا سکیں گے۔ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے میڈیا کو بتایا کہ کرونا ویکسینیشن سینٹر میں 12 رجسٹریشن کانٹرز، 6 بلاکس اور 96 کیوبیکلز بنائے گئے ہیں، ماس ویکسینیشن سینٹر کو 24 گھنٹے فعال رکھا جائے گا، عملہ تین شفٹوں میں کام کرے گا، ہر شفٹ میں 360 ہیلتھ کیئر ورکرز اپنی خدمات فراہم کریں گے۔وزیر صحت سندھ ڈاکٹر عذرا پیچوہو کا کہنا تھا کہ لوگوں کی جانب سے ایس او پیز کو اہمیت نہیں دی جا رہی، جس سے کرونا پھیلنے کا زیادہ امکان ہے،کراچی کے ضلع ایسٹ میں کرونا کے زیادہ کیسز رپورٹ ہوئے ہیں، عوام اس ویکسینیشن سینٹر کا فائدہ اٹھائیں۔وزیر صحت سندھ کا کہنا تھا کہ ویکسین رجسٹریشن مرحلے میں مسائل کی صورت ویکسینیشن سینٹر آئیں، ہمارا عملہ آپ کی رجسٹریشن کر کے ویکسین لگا دے گا، انہوں نے واضح کیا کہ سندھ میں کوویکس، ایسٹرازیینیکا اور سائنیو فارم اور کین سائنو ویکسین لگائی جائیں گی۔ڈاکٹر عذرا پیچوہو کا مزید کہنا تھا کہ این سی او سی میں فیصلہ ہوا کہ رواں سال کے آخر تک پورے ملک کے لیے 70 ملین ویکسین ڈوزز مہیا کئے جائیں گے، ایکسپو سینٹر کراچی میں قائم ماس ویکسینیشن سینٹر کے افتتاح کے موقع پر این سی او سی حکام، پارلیمانی سیکریٹری قاسم سراج سومرو، سیکریرٹری صحت کاظم جتوئی اور دیگر حکام بھی موجود تھے۔

مزید :

صفحہ اول -