اردو کے عظیم افسانہ نگار سعادت حسن منٹو کی آج 109ویں سالگرہ منائی جا رہی ہے 

اردو کے عظیم افسانہ نگار سعادت حسن منٹو کی آج 109ویں سالگرہ منائی جا رہی ہے 
اردو کے عظیم افسانہ نگار سعادت حسن منٹو کی آج 109ویں سالگرہ منائی جا رہی ہے 

  

لاہور ( ویب ڈیسک ) اردو کے عظیم افسانہ نگار سعادت حسن منٹو کی آج 109ویں سالگرہ منائی جا رہی ہے ، منٹو آج بھی اپنے چاہنے والوں کے دلوں میں زندہ ہیں۔

سعادت حسن منٹو 11مئی 1912ءکو غلام حسن منٹو امرتسری کے ہاں موضع سمبرالہ ضلع لدھیانہ بھارت میں پیدا ہوئے ۔ انہوںنے انسانی نفسیات کو اپنا موضوع بنایا اور پاکستان بننے کے بعد یہاں منتقلی پر بھی افسانہ نگاری کا سلسلہ جاری رکھا۔ 

 سعادت حسن منٹو کے دامن پر بڑے رقیق حملے ہوتے رہے ہیں،انہیں فحاشی پھیلانے والا ادیب بھی کہا گیا،مقدمات بھی بنے ،انہیں ملحد بھی قراردیا گیا ۔

سعادت حسن منٹو نے قیام پاکستان کے بعد ٹوبہ ٹیک سنگھ ، کھول دو ، ٹھنڈا گوشت ، دھواں اور بو سمیت درجنوں شاہکار افسانے تخلیق کئے۔ سعادت حسن منٹو 18جنوری 1955ءکو محض43 برس کی عمر میں دل کا دورہ پڑنے کے باعث اس جہاں فانی سے کوچ کر گئے۔

مزید :

ادب وثقافت -