ڈاکٹر فیاض کے قتل میں ملوث ملزم اورمقتول نعیم کے قاتل کو گرفتار کرلیاگیا

 ڈاکٹر فیاض کے قتل میں ملوث ملزم اورمقتول نعیم کے قاتل کو گرفتار کرلیاگیا

  

 لاہور(کر ائم رپو رٹر)انویسٹی گیشن پولیس کوٹ لکھپت نے قتل کی2مختلف وارداتوں میں ملوث ملزمان کو گرفتار کرلیا  کوٹ لکھپت میں ڈاکٹر فیاض کے اندھے قتل کی سنگین واردات میں ملوث ملزم محمد مبین جبکہ مقتول نعیم کے قاتل کو گرفتار کیا گیا ہے۔اِن خیالات کا اظہارایس ایس پی انویسٹی گیشن لاہورعمران کشور نے گز شتہ روز ایس پی انویسٹی گیشن ماڈل ٹاؤن آفس میں الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ایس پی انویسٹی گیشن ماڈل ٹاؤن سمیت دیگر افسران بھی موجود تھے۔ ایس ایس پی انویسٹی گیشن نے بتایا کہ قتل کی2مختلف وارداتوں میں ملوث ملزمان گرفتار کر کے آلہ قتل برآمدکر لیا گیا  سی سی پی او بلال صدیق کمیانہ کی طرف ڈاکٹر کے بلائنڈ مرڈر کا ملزم ٹریس کرنے پر ایس پی انویسٹی گیشن ماڈل ٹاؤن اور ٹیم کو شاباش، تعریفی اسناد اور کیش ایوارڈ دینے کا اعلان کیا۔

ہے۔انہوں نے کہا کہ کوٹ لکھپت میں ڈاکٹر فیاض کے اندھے قتل کی سنگین واردات میں ملوث ملزم محمد مبین کو گرفتار کیاگیا۔ ڈاکٹر فیاض ملزم مبین کے والد کے نجی ہسپتال میں ملازمت کرتا تھا جبکہ ملزم محمد مبین بھی اپنے والد کے ہسپتال میں ڈاکٹر فیاض کے ساتھ کام کرتا تھا۔ ملزم کے والد کے ذمہ ڈاکٹر فیاض کے ڈیڑھ لاکھ روپے واجب الاادا تھے۔ ملزم مبین ڈاکٹر فیاض سےExperience  لیٹر  دینے کا بھی مطالبہ کر رہا تھا۔ ایس اس پی عمران کشور نے بتایا کہ ملزم نے بقایا رقم کی ادائیگی سے بچنے اور لیٹر نہ دینے پر ڈاکٹر فیاض کے گھر میں گھس کر اندھا دھند فائرنگ کر دی۔ ملزم مبین کی فائرنگ سے ڈاکٹر فیاض موقع پر ہی دم توڑ گیا اور ملزم قتل کی سنگین واردات کے بعد موقع سے فرار ہو گیاتھا۔ ایس ایس پی انویسٹی گیشن نے مزید بتایا کہ انویسٹی گیشن پولیس کوٹ لکھپت نے ہی شہری نعیم کو قتل کرنیوالے ملزم آصف کو گرفتارکر لیا ہے۔ ملزم آصف گزشتہ6سال سے مقتول نعیم کی لنڈے کی دکان میں کام کر رہا تھا۔ ملزم آصف نے  اپنے مالک نعیم کا قیمتی موبائل ہتھیانے کے لیے چھریوں کے وار کر کے اسے قتل کر دیاتھا۔ ملزم آصف کو گرفتار کر کے آلہ قتل چھری اور موبائل فون برآمد کر لیا گیا ہے۔ شہریوں کے جان و مال کی حفاظت پولیس کی اولین ترجیح ہے۔ایس ایس پی انویسٹی گیشن نے کہا کہ جرائم پیشہ عناصر کے خلاف کارروائیاں جاری رہیں گی۔

مزید :

علاقائی -