پنجاب،تیس نئے سیاحتی مقامات کو ترقی دینے کا فیصلہ

پنجاب،تیس نئے سیاحتی مقامات کو ترقی دینے کا فیصلہ

  

ملتان(سٹی رپورٹر)حکومت پنجاب نے صوبے میں تیس نئے سیاحتی مقامات کو ترقی دینے کا فیصلہ کیا ہے جس سے سالانہ سو ارب روپے سے زائد کی آمدن حاصل ہوگئی جبکہ 20ہزار افراد کو روزگار ملے گا۔حکومت پنجاب نے ٹورازم فار اکنامک گروتھ پروگرام (بقیہ نمبر33صفحہ6پر)

شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے پروگرام کے تحت بدھ مت، سکھوں کے آٹھ مقدس مقامات، ہڑپہ کی پانچ ہزار سال پرانی تہذیب اور مری کے قریب کوٹلی ستیاں اور نڑ کے مقامات کو سیاحت کے لیے ترقی دینے کا فیصلہ کیا ہے۔منصوبے کے تحت خوشاب، چکوال، جہلم اور میانوالی کی سالٹ رینج میں بارہ سے چودہ مقامات مختلف مذاہب کے لیے مقدس گردانے جاتے ہیں اس کے علاوہ ہندو مت کے شاہی قلعے اور پرانی تہذیب کے آثار کو محفوظ بنانے اور سیاحوں کے لیے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔مری میں سیاحوں کا رش کم کرنے اور نئی سائٹ ڈویلپ کرنے کے لیے مری کی ایکسٹینشن کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے جس کے تحت کوٹلی ستیاں، اور، نڑ کے مقامات کو بھی سیاحوں کے لیے سہولیات سے مزین کیا جائے گا چیرلفٹ بنائی جائیں گے، روڈ اور مختلف سہولیات کی فراہمی کی جائیں گی،سیاحتی مقامات پر پاکستان کے مختلف صوبوں اور علاقوں کی ثقافت کو فروغ دینے کے لئے مختلف شاپس بھی بنائیں جائیں گی جس پر سیاح مختلف ثقافتی اشیاء خرید بھی سکیں گے جبکہ سیاحو ں کی تحفظ کے لئے سیکورٹی بھی فراہم کی جائے گی۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -