کرپشن، فراڈ کیس کی انکوائری مکمل: پانچ فاٹا افسر جبری ریٹائرڈ، تین کو نوکری سے فارغ کرنیکا حکم 

کرپشن، فراڈ کیس کی انکوائری مکمل: پانچ فاٹا افسر جبری ریٹائرڈ، تین کو نوکری ...

  

ملتان(سٹی رپورٹر)سیکرٹری ہاؤسنگ جنوبی پنجاب جاوید اختر محمود نے فاٹا کے آفیسران کے خلاف کرپشن اور فراڈ کیس میں انکوائری مکمل کر لی ہے۔فاٹا کی گلشن مارکیٹ میں 80کروڑ سے زائد کی اراضی پر قبضہ اور فراڈ میں پیڈا ایکٹ کے تحت کاروائی مکمل کر لی گئی ہے۔ پانچ افسران کو جبری ریٹائرڈ،تین نوکری سے برخاست،چار کی عہدوں سے تنزلی اور دو کی پنشن میں کٹوتی کے احکامات دے دیے گئے،ڈی جی ایم ڈی(بقیہ نمبر53صفحہ6پر)

 اے نے دو ماہ قبل رپورٹ سیکرٹری ہاسنگ کو پیش کی تھی۔جس پر سیکرٹری ہاسنگ جنوبی پنجاب نے تمام آفیسران اور ملازمین کی پرسنل ہیئرنگ کی اور انکوائری مکمل کر کے احکامات جاری کر دیئے رپورٹ کے مطابق ڈپٹی ڈائریکٹر فاٹا طاہر انصاری کے عہدے میں پانچ سال کی تنزلی کر دی گئی،  ڈپٹی ڈائریکٹر طارق جاوید کی پانچ سال ترقی روک دی گئی۔ڈپٹی ڈائریکٹر اظہر سعید کی تین درجے تنزلی کر دی گئی۔محمد یونس کی  25فیصد پینشن کی کٹوتی کے احکامات جاری کر دیئے۔اسسٹنٹ ڈائریکٹر انجینئرنگ محمد خالد کو جبری ریٹائرڈ کرنے کے احکامات دیے،اسسٹنٹ ڈائریکٹر محمد رضوان کی 50فیصد پنشن میں کٹوتی کے احکامات،ٹریسر محمد صدیق کو نوکری سے برخاست کرنے کے احکامات،ایچ ایم او مسعود احمد کو نوکری سے برخاست کرنے کے احکامات ڈپٹی ڈائریکٹرشفیق الرحمن کی سروس 2سال کی ترقی روک دی گئی۔اس موقع پر سیکرٹری ہاسنگ جنوبی پنجاب جاوید اختر محمود نے کہا کہ ادارے میں کرپٹ اور بے ایمان آفیسران کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ایسے عناصر سے آہنی ہاتھوں سے نمٹے گے۔آفیسران اور ملازمین ایمانداری سے ذمہ داریاں سر انجام دیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -