نیب نے فرح کے اثاثوں، اکاؤنٹس‘ٹرانزیکشنز کا ریکارڈ طلب کرلیا

  نیب نے فرح کے اثاثوں، اکاؤنٹس‘ٹرانزیکشنز کا ریکارڈ طلب کرلیا

  

لاہور، اسلام آباد(نامہ نگار،نیوز ایجنسیاں)  قومی احتساب بیورو (نیب)نے مختلف محکموں سے فرح خان کے اثاثوں کا ریکارڈ اور بینکوں سے اکاؤنٹس اور ٹرانزیکشنز کی تفصیلات طلب کرلیں نجی ٹی وی کے مطابق سابقہ خاتون اول بشری بی بی کی قریبی دوست فرح خان اور اس کے شوہر کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کی انکوئری کے معاملے پرلاہور نیب نے مختلف محکموں کو فرح خان کے اثاثوں کا ریکارڈ فراہم کرنے کے لیے مراسلے جاری کردیئے ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب لاہور نے مختلف اضلاع کے ڈپٹی کمشنر سے فرخ کی جائیداد کا ریکارڈ مانگ لیا اور ایف بی آر،ایس ای سی پی اور ایکسائز ڈیپارٹمنٹ کو بھی مراسلے جاری کردیا نیب کی جانب سے مختلف بینکوں سے فرح خان کے اکاؤنٹس اور ٹرانزیکشنز کی تفصیلات بھی طلب کی گئی ہیں  دوسری جانب اسلام آباد میں فرح خان کے لیگل ٹیکس ایڈوائزراسد رسول نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ  کہ فرح بی بی کے تمام معاملات عثمان بزدار کے وزیراعلیٰ بننے سے پہلے کے ہیں فرح خان کے اثاثوں میں چار گنااضافہکی خبریں غلط ہیں ہم اس کی مذمت کرتے ہیں فرح خان کے اثاثے 23کروڑ کے تھے جو بڑھ کر 70کروڑ کئے گئے۔انہوں نے کہا کہ تب کے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی ایمنسٹی سکیم میں ڈکلیئر ہے، 30جون 2018تک ٹیکس کلیئر بند ہوچکے تھے  اور تب اثاثے ڈکلیئر تھے۔ کوئی بات کرے گا تو ہم اس کا قانونی طور پر جواب دیں گے بہول اسد رسول نے کہا کہ میں ان کا ترجمان نہیں بلکہ ٹیکس کی تفصیل پر جواب دہ ہوں  سیاسی جواب نہیں دے سکتا  لیگل ٹیکس ایڈوائزر نے کہا کہ ایف بی آر کی خاص معلومات لیک کرنے والوں کیلئے بھاری سزائیں ہیں جو اثاثے دکلیئر کئے ان کا باقاعدہ ٹیکس دیتے رہے ہیں ا یڈوائزر فرح خان نے کہا کہ ن لیگ دور میں فرح کے اثاثے 70کروڑ تھے   جبکہ   تحریک انصاف دورمیں فرح کے اثاثوں میں 5کروڑ کا اضافہ ہوا۔ 

فرح خان 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -