جنگلات میں حادثاتی آگ کے تدراک کیلئے اقدامات ناگزیر: کمشنر ڈیرہ 

جنگلات میں حادثاتی آگ کے تدراک کیلئے اقدامات ناگزیر: کمشنر ڈیرہ 

  

          پشاور (سٹاف رپورٹر)کمشنر ڈیرہ اسماعیل خان ڈویژن عامر لطیف نے کہا ہے کہ جنگلات میں لگنے والی حادثاتی آگ کے تدارک کیلئے اقدامات اٹھائے جائیں۔ یہ ہدایات انہوں نے اپنے دفتر میں ڈویژنل فارسٹ فائرمنیجمنٹ ٹیم (ڈی ایف ایف ایم ٹی) کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے دیں۔ اجلاس میں ریجنل پولیس آفیسر شوکت عباس، ڈپٹی کمشنر ٹانک، جنوبی وزیرستان، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ڈیرہ، ڈسٹرکٹ پولیس آفیسرجنوبی وزیرستان،ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ڈیرہ، ڈویژنل فارسٹ آفیسرز، ڈسٹرکٹ فارسٹ آفیسرز، وائلڈ لائف آفیسرز، سول ڈیفنس، ریسکیو1122، پی ڈی ایم اے و دیگر متعلقہ محکموں کے افسران و نمائندوں نے شرکت کی۔ اجلاس کے دوران کمشنر ڈیرہ ڈویژن کو بریفنگ دیتے ہوئے ڈی ایف او ڈیرہ نے بتایا کہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ کی اطلاع کیلئے خصوصی واچرز کی ڈیوٹیز ترتیب دی گئی ہیں جبکہ گزشتہ اجلاس کے فیصلوں پر عملدرآمد کرتے ہوئے ریپڈ رسپانس ٹیمیں بھی تشکیل دی گئی ہیں۔ مزید بتایا گیا کہ چشمہ روڈ پر فائر لائنز بنائی جارہی ہیں جبکہ مختلف مقامات پر ہاٹ سپاٹ ڈکلیر کیے جا چکے ہیں اور پہلے سے بنائی گئی فائر لائنز کی صفائی کا عمل بھی جاری ہے۔ ڈی ایف او جنوبی وزیرستان نے بتایا کہ جنوبی وزیرستان میں دس فائر لائنز بنائی گئی ہیں اور عوا م بالخصوص وزیٹرز میں آگاہی کیلئے پمفلٹس بھی تقسیم کیے جا رہے ہیں جن میں احتیاطی تدابیر سمیت جلد آگ پکڑنے والے سوکھے پودوں اور پتوں سے متعلق معلومات درج ہیں جبکہ جلد آگ پکڑنے والے کونیفر نیڈلز کی کولیکشن کا عمل بھی جاری ہے تاکہ حادثاتی اور قدرتی آگ لگنے یا پھیلنے کے امکانات کو کم سے کم کیا جا سکے۔اس موقع پر کمشنر ڈیرہ عامر لطیف نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ زیادہ تر گھنے جنگلات ساؤتھ کی طرف ہیں لہذا زیادہ تدابیر اختیار کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے ہدایت کی کہ تمام محکمے اس سلسلے میں باہمی تعاون کا مظاہرہ کریں تاکہ خدانخواستہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کیلئے تمام ٹیمیں ہمہ وقت تیار ہوں۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی سطح پر ڈی ایف ایف ایم ٹی باقائدہ نوٹیفائی ہو چکے ہیں جن کا مقصد اس قسم کے واقعات کے تدارک کے حوالے سے اقدامات اٹھانا ہے لہذا گزشتہ واقعات کا جائزہ لیتے ہوئے ایسے واقعات کے تدارک کیلئے خاطر خواہ اقدامات اٹھائے جائیں۔ کمشنر نے ہدایت کی کہ ہاٹ سپاٹس سے متعلق تفصیل تمام متعلقہ محکموں بالخصوص متعلقہ اسسٹنٹ کمشنرز سے شیئر کی جائے کیونکہ ایسی صورتحال میں اسسٹنٹ کمشنر ہی انسیڈنٹ کمانڈر ہو گا۔ انہوں نے مزید ہدایت کی کہ جنوبی وزیرستان کے بیشتر علاقوں میں رسائی سے متعلق مسائل کا سامنا رہتا ہے لہذا اس سلسلے میں بھی بروقت پلان تیار رکھیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -