تاریخ کا مہنگا ترین حج سرکاری سکیم میں سبسڈی دینے کا فیصلہ، پیکیج 8لاکھ سے کم رکھنے کی تجویز

      تاریخ کا مہنگا ترین حج سرکاری سکیم میں سبسڈی دینے کا فیصلہ، پیکیج ...

  

        لاہور (میاں اشفاق انجم سے) تاریخ کا مہنگا ترین حج گورنمنٹ نے سرکاری حج پر سبسڈی دینے کا فیصلہ کر لیا، سرکاری پیکیج8لاکھ سے کم رکھنے کی تجویز۔ وزارت مذہبی امور حج پالیسی میں سرکاری حج پیکیج7لاکھ سے10لاکھ کے درمیان دینے کا اعلان کیا تھا۔سعودیہ میں اخراجات میں بے تحاشا اضافے کے بعد ساڑھے9لاکھ سرکاری حج پیکیج دینے کا فیصلہ کیا تھا۔ وفاقی وزیر مذہبی امور مولانا عبدالشکور نے سرکاری حج کے مہنگے پیکیج کے اعلان کے بعد سے پہلے آن لائن رجسٹریشن میں عوام کی عدم دلچسپی اور2019ء کے مقابلے میں 2022ء ڈبل ہونے اور عوامی ردعمل سے وزیراعظم میاں شہباز شریف کو آگاہ کیا اور سبسڈی دینے کی درخواست کی جیسے منظور کر لیا گیا ہے۔وزیراعظم نے سبسڈی کہاں سے اور کتنی دینے کی رپورٹ حج پالیسی کے مسودہ میں شامل کر کے وفاقی کابینہ کے آئندہ ہونے والے اجلاس میں پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔وزارت مذہبی امور کے ویلفیئر فنڈ کی جمع رقم سے حاصل ہونے والے سود سے سبسڈی دیئے جانے کا امکان ہے۔ سرکاری حج پیکیج ساتھ لاکھ سے زائد اور آٹھ لاکھ سے کم رکھنے کی تجویز ہے۔معلوم ہوا ہے سرکاری حج سکیم میں حج درخواستوں کی آن لائن وصول ہونے والی یکم مئی سے درخواستوں کی تعداد چار ہزار کے قریب ہے۔9 سے بنکوں کی طرف سے پہلے اور دوسرے دن10 ہزار کے قریب درخواستیں وصول ہوئی ہیں،80 ہزار درخواستیں وصول ہونے کا ٹارگٹ رکھا گیا ہے۔32ہزار سرکاری حاجی ہوں گے،13مئی تک درخواستیں آئیں گی حج درخواستوں کی وصولی میں سستی کی وجہ سے آن لائن فارم مشکل اور بنکوں کے عملے کی عدم دلچسپی بتایا گیا ہے۔

مہنگا ترین حج

مزید :

صفحہ اول -