پاکستان موسمیاتی تبدیلیوں کے حوالے سے دنیا کا پانچواں خطرے سے دوچار ملک قرار

پاکستان موسمیاتی تبدیلیوں کے حوالے سے دنیا کا پانچواں خطرے سے دوچار ملک قرار

  

         اسلام آباد(آئی این پی)گلوبل کلائمیٹ رسک انڈیکس نے پاکستان کو موسمیاتی تبدیلیوں کیلئے دنیا کا پانچواں سب سے زیادہ خطرے سے دوچار ملک قراردیدیا،سی پیک کے نو خصوصی اقتصادی زونز کیلئے ماحول دوست پالیسیوں کو فروغ دینے کی ضرورت،حکومت کا ماحولیاتی مسائل حل کرنے کا عزم۔ ویلتھ پاک کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کو چین پاکستان اقتصادی راہداری کے تحت قائم کیے جانے والے نو خصوصی اقتصادی زونز کیلئے ماحول دوست پالیسیوں کو فروغ دینے کی ضرورت ہے تاکہ پائیدار ترقی کو یقینی بنایا جا سکے۔خصوصی اقتصادی زونز کی تعمیر کا مقصد براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری کو راغب کرنا، ملک کی مجموعی پیداوار میں اضافہ، روزگار کے مواقع پیدا کرنا، علاقائی رابطوں کو بہتر بنانا اور برآمدات کو فروغ دینا ہے۔ بیلٹ اینڈ روڈ انی شیٹومنصوبے کا دوسرا مرحلہ پہلے مرحلے کے ابتدائی  پروگراموں کو کامیابی کیساتھ مکمل کرنے کے بعد اقتصادی بحالی پر مرکوز ہے۔خصوصی اقتصادی زونز آزادانہ تجارت کے علاقے ہیں جہاں متعلقہ قوانین کو کچھ ٹیکس چھوٹ کی اجازت دیکر غیر ملکی اور ملکی سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کیلئے تیار کیا گیا ہے۔ خصوصی اقتصادی زونز تجربات رفتار اور کارکردگی کے لحاظ سے مختلف ہوتے ہیں لیکن وہ کسی ملک کی اقتصادی ترقی کو تحریک دینے میں کافی کامیاب ہوتے ہیں۔ چین کے پاس خصوصی اقتصادی زونز کی ترقی کا 30سال سے زیادہ کا تجربہ ہے جو اس کی ترقی میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ یہ ماحولیاتی آفات کا باعث بننے والے ترقیاتی ماڈل پر عمل کرنے کے بجائے پائیدار اقتصادی ترقی کیلئے اقتصادی اور سماجی اقدار کو اپنانے پر مرکوز ہے۔ غیر ملکی سرمایہ کاری چین میں خصوصی اقتصادی زونز میں کل سرمایہ کاری کا تقریبا 50فیصدہے۔ پاکستان بھی چینی ماڈل کو نقل کرنیکی کوششیں کر رہا ہے۔ایشیائی ترقیاتی بینک کا طویل مدتی اسٹریٹجک فریم ورک ماحولیاتی طور پر پائیدار ترقی پر زور دیتا ہے۔ یہ قانونی، ریگولیٹری اور نفاذ کے فریم ورک میں پبلک سیکٹر کے اداروں کی صلاحیت کو بڑھا کر ملک کی پالیسیوں اور سرمایہ کاری کے پروگراموں میں ماحولیاتی تحفظات کو شامل کرنے کا مطالبہ کرتا ہے۔ ان چیلنجز کو مدنظر رکھتے ہوئے حکومت لوگوں کے فوری معاشی مسائل کے حل اور اس بات کو یقینی بنانے کے درمیان توازن قائم کرنے کی کوشش کر رہی ہے کہ صنعت کاری ماحولیاتی تنزلی کا باعث نہ بنے۔پاکستان نے قابل تجدید توانائی کی طرف بڑھنے کا عہد بھی کیا ہے۔

موسمیاتی تبدیلیاں 

مزید :

صفحہ آخر -