لندن میں مسلم لیگ (ن) کی "بڑی بیٹھک" کی تیاریاں ،فوری الیکشن ، زرداری کی " ڈبل گیم " اورتحریک انصاف کے لانگ مارچ سے نمٹنے  کیلئے اہم فیصلے متوقع

لندن میں مسلم لیگ (ن) کی "بڑی بیٹھک" کی تیاریاں ،فوری الیکشن ، زرداری کی " ڈبل ...
لندن میں مسلم لیگ (ن) کی

  

لاہور (جاوید اقبال  سے) مسلم لیگ (ن )نے قبل از وقت انتخابات اور تحریک انصاف کے لانگ مارچ کے غبارے سے ہوا نکالنے  کا فیصلہ کرلیا ۔ جس پر حتمی فیصلے کے لیے مشاورت  کرنے کے لیے مسلم لیگ (ن) کے بڑوں کی بڑی بیٹھک آج لندن میں ہوگی اس کے لئے وزیراعظم پاکستان شہباز شریف اور مسلم لیگ (ن) کی قیادت لندن گئی ہے،اہم مشاورت کے لئے  مسلم لیگ (ن )کے سربراہ نواز شریف نے وزیر اعظم اور قیادت کو لندن طلب کیا  ہے۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ ان معاملات پر ابتدائی مشورہ پاکستان میں ہوا اس کے بعد وزیراعظم نے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو "خصوصی پیغام" دے کر لندن بھیجا جہاں شاہد خاقان عباسی نے نواز شریف کو ملک کی اندر ونی صورتحال کے بارے میں آگاہ کیا۔شاہد خاقان عباسی نے نواز شریف کو حکومت کے ابتدائی دنوں پیش آنے والی مشکلات اور معاملات  پر بریفنگ دی انہوں نے نواز شریف کو بتایا کہ سابقہ پی ٹی آئی کی حکومت نے معاشی طور پر جو حا لات بنا دئیے ہیں ان میں ملک چلانا بہت مشکل ہے عمران خاں اور ان کی حکومت نے مہنگائی کا طو فان برپاکیا، تحریک انصاف مردہ گھوڑا بن چکی تھی لیکن  جب  سے ہم حکو مت میں آئے ہیں  اس مردہ گھوڑے میں جان پڑ گئی ہے عمران خان اب ہر چیز ملیامیٹ کرنا چاہتے ہیں ،خانہ جنگی چاہتے ہیں  بظاہر ان کا مطالبہ ہے کہ فوری الیکشن ہوں مگر حقیقی طور پروہ ایسا نہیں چاہتے ۔  حکومت کی اتحادی پاکستان پیپلز پارٹی کے سربراہ آصف علی زرداری" ڈبل گیم "کر رہے ہیں خان کے لانگ مارچ کو ڈنڈے کے زور سے نہیں ہوش سے روکنا ہوگا جس کے لیے ضروری ہے کہ فوری الیکشن کا اعلان کردیا جائےایسا کرنے سے عمران خان کے غبارے سے ہوا نکل جائے گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ شاہد خاقان عباسی نے نواز شریف کو یہ بھی مشورہ دیا  ہےکہ اہم حلقے بھی یہی چاہتے ہیں کہ ملک کے اندر افراتفری برپا نہ ہو۔  یہ بھی مشورہ  ہے کہ نواز شریف کی  فوری وطن واپسی مؤخر کرنا( ن) لیگ کے حق میں بہتر ہے نیب  قوانین میں ترمیم کرنے پر بھی بات چیت ہوئی۔ ذرائع نے یہ بھی بتایا ہے  کہ نواز شریف 200ممالک سے آسان اقساط پر قرضے اور سرمایہ کاری کے لیے بھی اپنا رول ادا کریں الیکشن کمیشن میں عمران خان نااہلی کیس پر بھی بات چیت ہوئی۔ ذرائع کے مطابق شاہد خاقان عباسی کی تجاویز پر فائنل مشاورت  کے لئے ہی  نواز شریف نے وزیر اعظم اور ان کے ساتھیوں کو لندن طلب  کیا  جن پر  تفصیلی مشاورت ہوگی اور حتمی فیصلہ کیا جائے گا ۔نواز شریف ملک کے اندر فوری انتخابات کے انعقاد کو ترجیح دیں گے اور  وزیر اعظم شہباز شریف کو قائل کریں گے کہ وہ قومی حکومت بناکر  اقتدار  سےالگ ہو جائیں  اور الیکشن کی تیاری کریں ایسا کرنے سے عمران خان نے اپنی حکومت کے دوران جو  کچھ غلط کیا کے اثرات اسی کو بھگتنا ہوں گے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -بین الاقوامی -