رواں سیزن میں گنا کی کرشنگ تاخیر کا شکار، کسانوںکو مالی نقصان اورگندم کی بیجائی متاثر ہونے کا خدشہ

رواں سیزن میں گنا کی کرشنگ تاخیر کا شکار، کسانوںکو مالی نقصان اورگندم کی ...

لاہور(اے پی پی )رواں سیزن گنا تیار ہونے کے باوجود اس کی کرشنگ تاخیر سے شروع ہونے سے کسانوںکو مالی نقصان کے علاوہ گندم کی بیجائی بھی متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔پاکستان ایگری فورم کے چیئرمین ابراہیم مغل کا کہنا ہے کہ رواں سیز ن سندھ کی شوگر ملوں میں چینی کی تیاری اکتوبر کے اختتام تک اور پنجاب میں نومبر کے پہلے ہفتے میں شروع ہو جانی چاہیے تھی۔ان کا کہنا تھا کہ اقتصادی رابطہ کمیٹی کی جانب سے سندھ و پنجاب میں بالترتیب 20 اور 25نومبر سے کرشنگ شروع کرنے کی تاریخ مقرر کرنے سے گنے کی تیار فصل کے کاشت کاروں کونقصان ہورہا ہے۔اس کے علاوہ گندم کی بیجائی میں تاخیر کے علاوہ سندھ میں سورج مکھی کی کاشت بھی وقت پر شروع نہیں ہوپارہی۔ابراہیم مغل کا کہنا تھا کہ حکومت کی جانب سے اب تک گنے کی نئی فصل کے کم سے کم نرخ بھی طے نہیں کیے ہیں۔

 انڈسٹری ذرائع کے مطابق سندھ میں 5 ملوں میں چینی کی تیاری کا عمل شروع ہو چکا ہے۔

مزید : کامرس