حکومت معاشی استحکام کیلئے موثر اقدامات کر رہی ہے: اسحا ق ڈار

حکومت معاشی استحکام کیلئے موثر اقدامات کر رہی ہے: اسحا ق ڈار

 اسلام آباد (اے پی پی) وفاقی وزیر خزانہ محمد اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ حکومت معاشی استحکام کیلئے موثر اقدامات کر رہی ہے اور ملکی معیشت جلد ہی دنیا کی 11ویں بڑی معیشت بن جائے گی۔ یہاں نجی ٹی وی چینل کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عالمی ریٹنگ ایجنسیاں پاکستان کو معاشی طور پر مثبت قرار دے رہی ہیں، موجودہ حکومت سادگی اور کفایت شعاری کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔ وزیراعظم کے صوابدیدی فنڈز ختم کردیئے گئے ہیں۔ وزیراعظم ہاﺅس کے اخراجات میں بھی کمی کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے توانائی کی قلت پر قابو پانے کیلئے 503 ارب روپے کے گردشی قرضہ کی ادائیگی کو یقینی بنایا، پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت کو سابقہ حکومت سے ورثہ میں 9 ارب ڈالر کا قرضہ ملا جسے ادا کیا جائے گا، حکومت نے ملک کو دیوالیہ ہونے سے بچانے کیلئے قسطوں کی ادائیگی کیلئے آئی ایم ایف سے قرضہ لیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم محمد نواز شریف نے ملک کو صحیح سمت گامزن کرنے کا تہیہ کر رکھا ہے۔

، مسلم لیگ (ن) کے اقتصادی ایجنڈے کے مطابق وفاقی بجٹ تیار کیا گیا۔قومی گرڈ میں 1700 میگاواٹ بجلی کا اضافہ کیا گیا۔ ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ حکومت بجلی کے گھریلو صارفین کو اربوں روپے کی سبسڈی دے رہی ہے۔ 200 یونٹس استعمال کرنے والے صارفین کو بجلی کی نئی قیمتوں سے مستثنیٰ قرار دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم محمد نواز شریف نے اپنے دورہ امریکہ کے دوران امریکی قیادت پر زور دیا کہ وہ پاکستان میں تجارتی اور اقتصادی سرگرمیوں کے فروغ کیلئے اپنی منڈیوں میں پاکستان مصنوعات کو زیادہ رسائی دے۔انہوں نے کہا کہ ملک میں سرمایہ کاری کی سرگرمیوں سے لوگوں کو روزگار کے مواقع ملیں گے۔انہوں نے کہا کہ حکومت ڈیزل پر 175 ارب روے کی سبسڈی فراہم کر رہی ہے۔ ملکی معیشت بحالی کی جانب گامزن ہے۔ گزشتہ ماہ 33 بنیادی اشیاءکی قیمتوں میں استحکام رہا،7 اشیاءکی قیمتیں کم ہوئیں جبکہ 13 اشیاءکی قیمتوں میں اضافہ ہوا۔ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ حکومت بجلی کے کئی بڑے منصوبوں پر کام کر رہی ہے اور آئندہ برس قومی گرڈ میں 8500 میگاواٹ بجلی کا اضافہ ہوگا۔

مزید : کامرس