حقانی نیٹ ورک کے اہم رکن اور افغان طالبان کے ترجمان ناصرالدین حقانی عرف ذبیح اللہ مجاہد پاکستان میں قتل

حقانی نیٹ ورک کے اہم رکن اور افغان طالبان کے ترجمان ناصرالدین حقانی عرف ذبیح ...
حقانی نیٹ ورک کے اہم رکن اور افغان طالبان کے ترجمان ناصرالدین حقانی عرف ذبیح اللہ مجاہد پاکستان میں قتل

  

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک) حقانی نیٹ ورک کے اہم رکن او ر افغان طالبان کے ترجمان ناصرالدین حقانی عرف ذبیح اللہ مجاہد کو پاکستان میں قتل کردیاگیاہے جس کی تصدیق تحریک طالبان نے کردی ہے ۔ طالبان ذرائع کے مطابق حقانی نیٹ ورک کے سربراہ جلال الدین حقانی کے چوتھے بیٹے ناصرالدین حقانی کوبھی قتل کردیاگیاہے جبکہ تین بیٹے پہلے ہی امریکی فوجیوں کے ہاتھوں مارے جاچکے ہیں ۔ طالبان کے مطابق ناصرالدین حقانی کی لاش وزیرستان منتقل کردی گئی جہاں نماز جنازہ کے بعد تدفین کردی گئی ۔طالبان ذرائع نے مزید تفصیلات بتانے سے گریز کرتے ہوئے بتایاکہ ناصرالدین حقانی کو پاکستان میں ہی قتل کیاگیاہے ۔مقامی میڈیا کے مطابق اتوار کی رات کو اسلام آباد کے نواحی علاقے بارہ کہومیں ناصرالدین حقانی کالے رنگ کی ایک لینڈکروزرمیں نان شاپ پر گئے تھے جہاں نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں ناصرالدین حقانی موقع پر ہی دم توڑ گئے جبکہ نان شاپ کے ایک ملازم فاروق سمیت دوافرادزخمی ہوگئے ۔ایکسپریس نیوز کے مطابق ناصرالدین حقانی کو26گولیاں ماری گئیں اور اُن کی موت کی تصدیق کے بعد ملزمان اُسی گاڑی میں ڈال کر لاش اپنے ساتھ لے کر مری روڈ کی طرف نکل گئے ۔ بتایاگیاہے کہ ملزمان نے گاڑی میں موجود شہد کے ڈبے جائے وقوعہ پر پھینک دیئے جنہیں پولیس نے تحویل میں لے لیاہے ۔ آئی جی اسلام آباد نے واقعہ سے لاعلمی کا اظہارکرتے ہوئے بتایاکہ تحقیقات کی جارہی ہیں ۔ناصرالدین حقانی ذبیح اللہ مجاہد کے نام سے افغان طالبان کی ترجمانی بھی کررہے تھے ۔ یادرہے کہ ناصرالدین حقانی اپنے نیٹ ورک کے مالی معاملات کو بھی دیکھتے تھے جبکہ اُن کے تین بھائی پہلے ہی امریکیوں کے ہاتھوں مارے جاچکے ہیں ۔جلال الدین حقانی سعودی یونین اور امریکہ کے خلاف لڑے تھے اور امریکہ نے اُن کے اثاثے بھی منجمد کررکھے ہیں ۔

مزید : پشاور /اہم خبریں