مولانا فضل الرحمان کےپلان بی اور سی کی تفصیلات سامنے آگئیں

مولانا فضل الرحمان کےپلان بی اور سی کی تفصیلات سامنے آگئیں
مولانا فضل الرحمان کےپلان بی اور سی کی تفصیلات سامنے آگئیں

  



اسلا م آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)آزادی مارچ کے پلان بی کا معاملہ ، جمعیت علما اسلام ف کی مرکزی قیادت کا اجلاس آج دوپہر کو مولانا فضل الرحمان کی رہائش گاہ پرہوگا۔۔اجلاس میں اپوزیشن کی دیگر جماعتوں کی مارچ میں شرکت ، حکومتی اقدامات اور دیگر اہم معاملات پر تبادلہ خیال کیاجائے گا۔اجلاس میں پلان بی پرعملدرآمد پر مشاورت کی جائے گی اور آئندہ کیلئے لائحہ عمل طے کیاجائے گا۔نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ اجلاس میں صوبائی اورضلعی قیادت بھی شریک ہوگی جبکہ رہبر کمیٹی کے اپوزیشن جماعتوں سے رابطوں کے حوالے سے بھی بات چیت کی جائے گی۔

ضرور پڑھیں:”کیانوازشریف کو میرٹ پر ضمانت ملی“ ؟صحافی کے سوال پر فردوس عاشق اعوان نے بتا دیا

برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق جے یو آئی رہنماوں نے بتا یا ہے کہ پلان بی اور سی میں توڑ پھوڑ اور جلاو¿ گھیراو¿ تو نہیں ہو گا البتہ یہ ملک گیر ہو گا اور اس میں شٹرڈاون اور پہیہ جام ہڑتالوں جیسے متبادل آپشنز شامل ہوں گے۔جے یو آئی کےرہنماؤں کا کہنا ہے کہ ان کی جماعت نے وزیر اعظم کے استعفے اور نئے انتخابات کے مطالبات کو تسلیم نہ کرنے کی صورت میں پلان بی اور سی پہلے سے ہی بنا رکھا ہے۔

جے یو آئی کے رہنماؤں کے مطابق وہ ایک سال کی تیاری کے ساتھ اسلام آباد آئے ہیں۔قاری رحمان کہتے ہیں کہ انہیں اپنی جماعت کی قیادت کی طرف سے انتظامات بڑھانے کا حکم ملا ہے۔مولانا غفور حیدری کا کہنا ہے کہ اہم فیصلے مرکزی مجلس شوریٰ، مجلس عاملہ اور مجلس عمومی میں کیے جاتے ہیں۔ اگر کوئی مشاورت درکار ہوتی ہے تو رہنماؤں کو بلا کر ایمرجنسی میں مشاورت بھی کی جاتی ہے۔انھوں نے کہا کہ جے یو آئی نے پلان اے، بی اور سی کی منظوری مشاورت کے بعد دی ہے۔

مزید : قومی